.

سردارایازصادق قومی اسمبلی کے اسپیکر،مرتضیٰ عباسی ڈپٹی اسپیکرمنتخب

پی پی پی کے امیدوار دستبردار،پی ٹی آئی اور ایم کیوایم کا جمہوری روایت نبھانے کے لیےمقابلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان مسلم لیگ-نواز (پی ایم ایل ن) کے سردار ایاز صادق پارلیمان کے ایوان زیریں قومی اسمبلی کے اسپیکر اور مرتضیٰ جاوید عباسی ڈپٹی اسپیکر منتخب ہوگئے ہیں۔

پارلیمان ہاؤس اسلام آباد میں سوموار کو پہلے قومی اسمبلی کے نئے اسپیکر کے انتخاب کے لیے خفیہ طریقے سے ووٹ ڈالے گئے۔مسلم لیگ کے امیدوار سردار ایاز صادق کے حق میں ایوان میں موجود تین سو تیرہ اراکین میں سے دو سو اٹھاون نے ووٹ دیے جبکہ ان کے مد مقابل امیدواروں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار شہریار آفریدی نے اکتیس ووٹ حق حاصل کیے اور متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم ) کے امیدوار ایس اے اقبال قادری نے تیئس ووٹ حاصل کیے۔

سردار ایازصادق نے اسپیکر منتخب ہونے کے بعد اپنے عہدے کا حلف اٹھایا۔قومی اسمبلی کی سبکدوش ہونے والی اسپیکر ڈاکٹر فہمیدہ مرزا نے ان سے حلف لیا۔اس کے بعد نئے اسپیکر کی نگرانی میں قومی اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر کا انتخاب عمل میں آیا۔

پی ایم ایل این کے امیدوار مرتضیٰ جاوید عباسی کے حق میں تین سو بارہ میں سے دوسو اٹھاون اراکین نے ووٹ ڈالے۔پی ٹی آئی اور ایم کیو ایم نے ڈپٹی اسپیکر کے انتخاب میں خواتین امیدوار میدان میں اتاری تھیں۔ایم کیو ایم کی کشور زہرا نے تیئس اور پی ٹی آئی کی منزہ حسن نے اکتیس ووٹ حاصل کیے۔

اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے انتخاب کے لیے خفیہ رائے شماری سے قبل سابق حکمران پاکستان پیپلز پارٹی نے اپنے امیدواروں نواب یوسف تالپور اور غلام رسول کوریجہ کو مقابلے سے دستبردار کرالیا اور پیپلز پارٹی کے ارکان نے بھی مسلم لیگ کے امیدواروں ہی کو ووٹ دیے ہیں۔

اب بدھ پانچ جون کو وزیراعظم کا انتخاب عمل میں آئے گا لیکن یہ بھی ایک معمول کی کارروائی ہوگی اور پی ایم ایل این کے سربراہ میاں محمد نواز شریف تیسری مرتبہ ملک کے وزیراعظم بن جائیں گے کیونکہ ان کی جماعت کو تین سو بیالیس اراکین پر مشتمل قومی اسمبلی میں واضح اکثریت حاصل ہے جبکہ جمعیت علماء اسلام اور دیگر چھوٹی جماعتوں بھی اس کی حمایت کررہی ہیں۔

ایوان زیریں کے قائد ایوان کے انتخاب کے لیے چار جون منگل کو کاغذات نامزدگی وصول کیے جائیں گے اور وزیراعظم کا انتخاب پانچ جون کوہوگا۔میاں نوز شریف تیسری مرتبہ وزارت عظمیٰ کے منصب پر فائز ہونے والے ملک کے پہلے سیاستدان ہوں گے۔ان کے مقابلے کے لیے پاکستان تحریک انصاف نے معروف سیاست دان مخدوم جاوید ہاشمی کو وزارت عظمیٰ کا امیدوار نامزد کیا ہے۔تاہم سابق حکمراں پاکستان پیپلز پارٹی نے ابھی وزارت عظمیٰ کے امیدوار کا فیصلہ نہیں کیا۔قومی اسمبلی میں پی ایم ایل این کی نشستوں کی تعداد 185 ہے۔