.

صدر پاکستان کے چیف سیکیورٹی آفیسر بم دھماکے میں جاں بحق

آصف زرداری، نواز شریف سمیت اہم شخصیات کا اظہار افسوس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے بندرگاہی شہرکراچی میں بدھ کی شام ایک زوردار دھماکے میں صدر مملکت آصف علی زرداری کے چیف سیکورٹی گارڈ اور دیرنیہ پارٹی کارکن بلال شیخ سمیت تین افراد جاں بحق ہوگئے۔

پاکستان ٹیلی ویژن کے مطابق یہ دھماکا کراچی کے علاقے نیو ٹاؤن کے قریب ہوا جس میں چھے پولیس کے جوانوں اور وفاقی تحقیقاتی ادارے 'ایف آئی اے' کے ایک اہلکار سمیت گیارہ افراد زخمی بھی ہوئے ہیں، امدادی ٹیمیں جائے وقوع پر پہنچ گئی ہیں۔

پولیس کے اعلی حکام نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے اس بات کی تصدیق کردی ہے کہ دھماکہ خود کش تھا۔ ایس پی پولیس عثمان باجوہ نے بتایا ’دھماکہ خودکش تھا جبکہ اس کا ہدف بلال شیخ تھے‘. بلاول ہاؤس کے ایک ترجمان نے بھی بلال شیخ کی ہلاکت کی تصدیق کردی ہے۔

شیخ صدر سیکورٹی آفیسر ہونے کے ساتھ ساتھ پاکستان پیپلز پارٹی کے سرگرم کارکن بھی تھے۔ ڈی آئی جی ایسٹ کے مطابق دھماکے سے ایک پولیس موبائل کو بھی نقصان پہنچا۔

خیال رہے کہ یہ دھماکہ ایسے موقع پر سامنے آیا ہے جب جمعرات کے روز پاکستان میں رمضان المبارک کا آغاز ہونے جا رہا ہے۔ بم حملے کے بعد مقامی ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔

ابھی کسی گروپ نے حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے تاہم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) اس سے قبل پی پی پی کو اسکے "سیکولرخیالات" کے باعث ہدف بنا چکی ہے۔