.

لڑکیوں کی تعلیم کے دشمنوں کی موت 'برقع ایونجر' آ رہی ہے

پاکستان کی پہلی اینیمیٹد سیریز نجی ٹی وی پیش کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان میں لڑکیوں کے سکول بند کروانے والے عناصر سے نمٹنے کے لیے ایک برقع پوش خاتون ٹیچر سامنے آ رہی ہیں۔ فرق صرف اتنا ہے کہ حقیقی دنیا کی بجائے یہ ٹیچر ایک کارٹون کی صورت میں ٹی وی پر سامنے آئیں گی۔’برقع ایونجر‘ نامی یہ کارٹون سیریز اگلے ماہ سے پاکستان کے ایک نجی ٹی وی چینل پر دکھائی جائے گی۔

خبر رساں اداروں کے مطابق یہ پاکستان کی تاریخ کی پہلی اینیمیٹد سیریز ہو گی۔ پاکستان میں جہاں سینکڑوں کی تعداد میں لڑکیوں کے سکول طالبان کے ہاتھوں تباہ ہوئے ہیں اس کارٹون سیریز کی اہمیت بڑھ جاتی ہے۔

اردو زبان میں بنائی گئی اس سیریز کے بانی پاپ گلوکار ہارون رشید ہیں۔ اس پروگرام کو ’ونڈر وومن‘ اور ’سوپر گرل‘ جیسے کرداروں کا جواب کہا جا رہا ہے۔

برقع ایونجر کی کہانی سرسبز و شاداب پہاڑوں میں گھرے ہوئے ’حلوہ پور‘ نامی فرضی شہر کے گرد گھومتی ہے۔ اس کے دیگر کرداروں میں تین طالب علم شامل ہیں جو قلم اور کتاب کی مدد سے شرپسند جادوگر بابا بندوق اور اس کے ساتھیوں کے خلاف لڑائی کرتے ہیں۔ کہانی کے مرکزی ویلن وڈیرہ پجیرو ہیں جو ایک بدعنوان سیاست دان ہیں۔

برقع پوش ہیروئن کا نام جیا ہے اور انھوں نے کراٹے کے داؤ پیچ اپنے والد کبڈی جان سے سیکھے ہیں۔ وہ برقعے کو اپنی شناخت چھپانے کے لیے استعمال کرتی ہیں۔

پروگرام کے بانی ہارون رشید کہتے ہیں کہ اس سیریز کا مقصد لڑکیوں کی تعلیم کی اہمیت کو اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ ماحول کا خیال رکھنے اور تعصب سے بچنے پر توجہ مرکوز کرنا ہے۔

انھوں نے خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’اس سیریز کی ہر قسط کسی نہ کسی اخلاقی نکتے کے گرد گھومتی ہے، جس کی مدد سے بچوں کو ایک طاقت ور سماجی پیغام دیا جاتا ہے۔ تاہم یہ سیریز مکمل طور پر تفریحی ہے اور اس میں ہنسی مذاق، ایکشن اور ایڈونچر دکھایا گیا ہے۔‘