.

پاکستان: دہشت گردی کے ہائی پروفائل ملزمان فیصل آباد جیل منتقل

اقدام خیبر پختونخوا میں جیلوں پر حملوں کے بعد ضروری ہو گیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستاں میں دہشت گردی کی حالیہ دنوں ایک مرتبہ پھر بڑھ جانے والی کارروائیوں اور خصوصا جیلوں پر حملے کر کے قیدیوں کو چھڑانے کے واقعات کے بعد حکومت نے 49 مبینہ خطرناک ترین قیدیوں کو فیصل آباد کی جیل میں منتقل کر دیا ہے۔ ان منتقل کیے گئے قیدیوں میں پانچ امریکی دہشت گرد بھی شامل ہیں۔

فیصل اباد جیل ماضی میں بھی خطرناک اور غیر ملکی قیدیوں کے حوالے سے اہم رہی ہے۔ حالیہ انتظامی فیصلے کے پیش نظر جن قیدیوں کو فیصل آباد لایا گیا ہے ان میں انتہائی پروفائل کی حکومتی شخصیات اور اداروں پر حملہ آور ہونے والے مبینہ دہشت گرد شامل ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق زیادہ تر قیدیوں کو اڈیالہ جیل راولپنڈی سے منتقل کیا گیا ہے، ان میں جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف، سابق وزیر اعظم شوکت عزیزپر حملے کرنے والے ملزمان بھی ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے ذریعے جن قیدیوں کے نام سامنےآئے ہیں۔ ان ڈاکٹر عثمان بھی قابل ذکر ہے جو راولپنڈی میں فوج کے ہیڈ کوارٹرز پر حملے میں ملوث ہے۔ جبکہ سرگودھا ائیر بیس پرحملے میں ملوث پانچ امریکی ملزمان موجود ہیں جنہیں سکیورٹی ادراوں دسمبر 2009 میں سرگودھا سے گرفتار کیا تھا۔

واضح رہے جیلوں پر حملے کر کے اپنے ساتھیوں کو چھڑانے کی دھمکیاں دیتے آئے ہیں ،اس لیے تازہ اقدامات کیے گئے ہیں۔