پاکستان: اورکزئی ایجنسی میں خودکش حملہ، 15 افراد ہلاک، متعدد زخمی

طالبان کے منحرف گروہ کی عمارت خود کش دھماکے کا ہدف تھی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

پاکستان کے شمال مغربی علاقے فاٹا کی اورکزئی ایجنسی میں ایک خودکش بمبار نے بارود سے بھری گاڑی مقامی مسلح گروپ کی عمارت سے ٹکرا دی، جس کے نتیجے میں ابتدائی معلومات کے مطابق 15 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔

ایک حکومتی عہدیدار کے مطابق مسلح گروہ کے کمانڈر نبی حنفی اس دھماکے کے وقت عمارت میں موجود نہ تھے۔ نبی حنفی اورکزئی ایجنسی میں پاکستانی طالبان کے خلاف لڑنے والے لشکر کا حصہ ہیں۔

پولیٹیکل اتھارٹی کے حکام کا کہنا ہے کہ بارود سے بھری گاڑی ٹکرانے سے قبل عمارت پر مسلح افراد نے فائرنگ بھی کی تھی۔ اس دھماکے کے نتیجے میں 15 افراد ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہو گئے تھے۔ زخمیوں کو فوری طور پر مقامی ہسپتالوں میں منتقل کر دیا گیا تھا۔

دھماکے کا نشانہ بننے والی عمارت دھماکے کی شدت کی وجہ سے گر گئی ہے اور آس پاس کی عمارتوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔

ملا نبی حنفی تحریک طالبان پاکستان کا حصہ ہوتے تھے مگر بعد میں وہ حکومت پاکستان کے ساتھ اتحاد کرکے طالبان مخالف جنگ کا حصہ بن گئے تھے۔

ملا نبی نے پہلے بھی یہ بتایا تھا کہ ان کا گروپ طالبان کے نشانے پر ہے کیوںکہ طالبان ہنگو، کوہاٹ، اورکزئی اور کرم ایجنسی کے دوسرے حصوں پر قبضہ کرنا چاہتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں