.

ملالئے کی خود نوشت فروخت کرنے والوں کو طالبان کی دھمکی

"مذہب کو سیکولرازم سے بدلنے پر انعام دیئے جا رہے ہیں"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کالعدم تحریک طالبان پاکستان نے خبردار کیا ہے کہ ملالئے یوسف زئی کی کتاب ”آئی ایم ملالئے“ کوئی فروخت کرتا پایا گیا تواس کو سنگین نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا، اس لیے کہ انہوں نے بہادری کا ایسا کوئی کام نہیں کیا، لیکن انہوں نے اپنے مذہب کو سیکولرازم سے تبدیل کرلیا ہے، جس کے وجہ سے انہیں یہ اعزازت مل رہے ہیں۔

تحریک طالبان کے ترجمان شاہد اللہ شاہد نے معاصر عزیز "ڈان" سے بات کرتے ہوئے کہا کہ انہیں علم تھا کہ ملالئے اسلام کے دشمنوں سے اعزازات حاصل کرلیں گی۔

اُن کا کہنا تھا کہ ملالئے نے سیکولرازم کے لیے اسلام کو ترک کردیا، اسی لیے انہیں اعزازت دیے جارے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ میڈیا اور عالمی برادری کو یہ بات ذہن میں رکھنی چاہئیے کہ جامعہ حفصہ، اسلام آباد کی خواتین طالبعلموں کو ان کی بہادری کے باوجود انہیں کبھی بھی کوئی اعزازنہیں دیا جائے گا۔ طالبان ملالئے یوسف زئی کو قتل کرنے کا کوئی بھی موقع نہیں گنوائیں گے اور جو بھی ان کی کتاب فروخت کرتا پایا گیا اس کو بھی نشانہ بنایا جائے گا۔

انہوں نے سوات میں تحریک طالبان کے کمانڈر مولانا فضل اللہ کی ہلاکت کی تردید کی ، جیسا کہ میڈیا میں رپورٹ کیا گیا تھا کہ وہ افغانستان کے صوبے کنڑ میں ایک حملے سے ہلاک ہوگئے ہیں۔

شاہد اللہ شاہد نے کہا کہ حکومت طالبان کے ساتھ مذاکرات کے حوالے سے سنجیدہ نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم معصوم لوگوں کو ہلاک نہیں کررہے ہیں۔ ایک تیسری قوت ہے جو عام لوگوں کو نشانہ بنارہی ہے تاکہ طالبان کو بدنام کیا جاسکے۔