.

پاکستان میں ایک اور ڈرون حملہ، چھ ہلاک

پہلی بار ڈرون کے ذریعے صوبہ خیبر کو نشانہ بنایا گیا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان میں جمعرات کو علی الصباح ایک اور امریکی ڈرون کے ذریعے ڈرون میزائل داغے گئے ہیں۔ اس صبح سویرے ہونے والے میزائل حملے کے نتیجے میں ابتدائی اطلاعات کے مطابق کم از کم چھ افراد جاں بحق ہو گئے ہیں۔

یہ پہلا ڈرون حملہ ہے جو صوبہ خیبر پختونخواہ کے ایک ضلع میں کیا گیا ہے اس سے پہلے امریکا ڈرونز کے ذریعے قبائلی اور نیم قبائلی علاقوں کو اپنے مہلک میزائلوں سے نشانہ بناتا رہا ہے۔ جبکہ صوبہ خیبر پختونخواہ اس کی میزائل بازی سے محفوظ رہا ہے۔

واضح رہے کہ یہ ایک ایسے موقع پر کیا گیا حملہ ہے جب پاکستان کے مشیر برائے سلامتی اور امور خارجہ سرتاج عزیز نے محض ایک روز پہلے پارلیمنٹ کے ایوان بالا سینیٹ کی خارجہ امور کمیٹی کو باور کرایا تھا کہ امریکہ نے طالبان کے ساتھ مذاکرات کے دوران میزائل حملے نہ کرنے کی یقین دہانی کرائِی ہے۔

دوسری جانب امریکی ڈرون حملوں کے خلاف صوبہ خیبر پختون خواہ کی مخلوط حکومت میں شامل جماعتیں پاکستان تحریک انصاف اور جماعت اسلامی نے 23 نومبر سے نیٹو سپلائی روکنے کا اعلان کر رکھا ہے۔

مخلوط حکومت میں شامل تیسری جماعت نے نیٹو سمیت بعض دیگر ایشوز پر اختلاف کے باعث چند روز قبل ہی پختون خواہ سے علیحدگی اختیار کر لی تھی۔

سرکاری سکیورٹی ذرائع کے مطابق جمعرات کو علی الصباح تقریبا چار بجے ضلع ہنگو کے دینی مدرسے مفتاح القرآن پر ڈرون کے ذریعے میزائل فائر کیے گئے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق اس حملے میں آٹھ افراد مارے گئے ہیں جبکہ متعدد زخمی ہیں۔

ان ہلاک ہونے والوں میں مدرسے کے اساتذہ جن کی تعداد دو بتائی جاتی ہے، جبکہ طلبہ بھی جاں بحق ہو گئے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ مدرسے میں طلبہ کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے جانی نقصان کم ہوا ہے۔

واضح رہے ضلع ہنگو کی تحصیل ٹل قبائلی علاقہ میں گھری ہوئی تحصیل ہے۔ اس ضلع میں تین روز قبل شیعہ سنی تصادم کے باعث کچھ دیر کیلیے کرفیو بھی نافذ رہا ہے۔

رواں ماہ کے شروع میں امریکی ڈرونز کے باعث تحریک طالبان پاکستان کا سربراہ حکیم اللہ محسود مارا گیا تھا۔ جسے پاکستان میں بالعموم حکومت پاکستان اور طالبان کے درمیان امکانی مذاکرات پر ڈرون حملہ قرار دیا گیا تھا۔

امریکہ کا موقف ہے کہ دہشت گردی سے نمٹنے کا سب سے موثر ذریعہ ڈرون حملے ہیں جبکہ انسانی حقوق کی عالمی تنظیمیں بھی ان حملوں کو غیر قانونی اور معصوم شہریوں کی جانیں لینے کے ذمہ دار سمجھتی ہیں