.

پاکستان کرکٹ بورڈ کا سربراہ عدالت سے بحال

فوری عہدہ سنبھالنے کا ارادہ ہے: ذکاء اشرف باجوہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے دارالحکومت میں قائم اسلام آباد ہائی کورٹ نے کرکٹ بورڈ کے سربراہ ذکاء اشرف باجوہ کو ان کے عہدے پر بحال کر دیا ہے۔ ذکاء اشرف باجوہ آٹھ مئی 2013 کو پاکستان کرکٹ بورڈ کے چئیرمین منتخب ہوئے تھے۔ تاہم ان کے انتخاب کو عدالت میں چیلنج کر دیا گیا تھا۔

عدالت عالیہ کے سنگل بنچ نے انتخاب کے خلاف درخواست کو منظور کرتے ہوئے 28 مئی کو ذکاء اشرف باجوہ کو بطور چئیرمین کام کرنے سے روک دیا تھا۔ عدالت عالیہ اسلام آباد نے یہ فیصلہ سابق کوچ میجر [ریٹائرڈ] ندیم سڈل کی درخواست پر سنایا تھا۔ ندیم سڈل نے ان کے طریقہ انتخاب کو چیلنج کیا تھا۔

ذکاء اشرف باجوہ چار سال کیلیے اس عہدے کے لئے منتخب ہوئے تھے۔ اس عدالتی فیصلے کیخلاف انہوں نے انٹر کورٹ اپیل دائر کی تھی جس کا بدھ کے روز فیصلہ سنایا گیا ہے۔

ذکاء اشرف باجوہ کی برطرفی کے دوران کرکٹ بورڈ کی کی کمیٹی کی سربراہی صحافی اور اینکر پرسن نجم سیٹھی کرتے رہے ہیں۔ مسٹر باجوہ کسی بھی وقت قذافی سٹیڈیم لاہور پہنچ کر اپنا منصب سنبھالنے کا اردہ رکھتے ہیں۔

پاکستان کی کرکٹ ٹیم میں حالیہ برسوں میں آنے والے اونچ نیچ کی طرح کرکٹ بورڈ بھی کچھ عرصہ سے اندرونی کھینچا تانی کا شکار ہے، تاہم امکان ہے اس عدالتی فیصلے کے بعد کھیلوں سے متعلق ادارے کی کارکردگی میں استحکام آنے کا امکان ہے۔