.

پاکستان کی ٹی 20 ٹیم کے کپتان محمد حفیظ مستعفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کی قومی ٹونٹی 20 ٹیم کے کپتان محمد حفیظ بنگلہ دیش میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم کے ہاتھوں عبرت ناک شکست کے بعد مستعفی ہوگئے ہیں۔

پاکستان کی ٹیم ٹی ٹونٹی عالمی کپ کرکٹ ٹورنا منٹ کے سپر10 مرحلے میں ویسٹ انڈیز سے منگل کو کھیلے گئے میچ میں 84 رنز سے ہار گئی تھی اور وہ سیمی فائنل میں پہنچنے میں ناکام رہی تھی۔2007ء سے کھیلے جارہے ٹی 20 عالمی کپ میں یہ پہلا موقع ہے کہ پاکستانی ٹیم سیمی فائنل تک رسائی میں ناکام رہی ہے۔

محمد حفیظ نے جمعرات کو لاہور میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے اجلاس کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے شکست کی ذمے داری قبول کرتے ہوئے ٹیم کی قیادت سے دستبردار ہونے کا اعلان کیا ہے۔انھوں نے کہا کہ ''میں ٹیم کی شکست کی تمام تر ذمے داری قبول کرتا ہوں''۔ان کا کہنا ہے کہ ''انھیں کسی نے کپتانی چھوڑنے پر مجبور نہیں کیا۔اب یہ پی سی بی کی ذمے داری ہے کہ وہ ٹیم کے نئے قائد کا انتخاب کرے''۔

محمد حفیظ کا کہنا تھا کہ ''میں کسی بھی کپتان کی قیادت میں کھیلنے کو تیار ہوں۔میں نے بطور کپتان اور کھلاڑی اپنی ذمے داری پوری کردی ہے''۔ان کا کہنا تھا کہ ہمارے کھلاڑیوں نے بہت سی غلطیاں کی تھیں جو ہماری شکست پر منتج ہوئیں۔

پاکستانی ٹیم نے ٹونٹی 20 عالمی کپ کرکٹ ٹورنا منٹ کا آغاز بھارت کے ساتھ میچ سے کیا تھا اور اس میچ میں اسے روایتی حریف سے شکست سے دوچار ہونا پڑا تھا۔آسٹریلیا اور بنگلہ دیش کے ساتھ کھیلے گئے میچوں میں پاکستانی ٹیم نے کامیابی حاصل کی تھی لیکن ویسٹ انڈیز کے خلاف اہم میچ میں اس نے باؤلنگ اور بیٹنگ دونوں شعبوں میں خراب کارکردگی دکھائی تھی اور پوری ٹیم بیاسی رنز پر آؤٹ ہوگئی تھی۔اس طرح اسے چوراسی رنز سے شکست سے دوچار ہونا پڑا تھا۔

کپتان محمد حفیظ نے اس بدترین شکست پر قوم سے معاف مانگی ہے اور کہا ہے کہ انھیں شائقین کرکٹ کی توقعات پر پورا نہ اترنے کا افسوس ہے۔پاکستانی ٹیم کے کوچ معین خان نے کہا ہے کہ محمد حفیظ کے فیصلے کو سراہا جانا چاہیے۔انھوں نے میڈیا اور شائقین کرکٹ سے کہا ہے کہ وہ ٹیم کی حوصلہ افزائی کریں۔

واضح رہے کہ تینتیس سالہ محمد حفیظ نے انتیس ٹونٹی 20 میچوں میں پاکستانی ٹیم کی قیادت کی ہے۔ان میں سترہ میں پاکستان فاتح رہا اور گیارہ میں اسے شکست ہوئی جبکہ ایک میچ بے نتیجہ رہا تھا۔

اب یہ قیاس آرائی کی جارہی ہے کہ سابق قومی کپتان شاہد آفریدی کو ایک مرتبہ پھر ٹی 20 قومی ٹیم کی قیادت سونپی جائے گی۔انھوں نے تین سال قبل عالمی کپ کرکٹ ٹورنا منٹ میں پاکستانی ٹیم کی قیادت کی تھی۔اس مقابلے میں پاکستانی ٹیم سیمی فائنل میچ میں بھارت سے شکست سے دوچار ہوگئی تھی۔