.

پاک فوج کے وقار کا دفاع کیا جائے گا: جنرل راحیل شریف

آرمی چیف کا سپیشل سروسز گروپ کے ہیڈ کوارٹرز کا دورہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے ہر حال میں فوج کے وقار کا دفاع کرنے کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسلح افواج تمام اداروں کے وقار کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے۔

جنرل راحیل نے یہ بات ایک ایسے وقت میں کہی ہے جب فوج کے بارے میں ملک میں گفتگووں اور تنقید کے دائرے میں وسعت کا ماحول ہے۔ فوج کے ترجمان شعبے آئی ایس پی آر کے جاری کردہ بیان کے مطابق جنرل راحیل نے ان خیالات کا اظہار تربیلہ میں پاک فوج کے سپیشل سروسز گروپ کے دورہ کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا ہے۔

واضح رہے فوج پر سب سے زیادہ تنقید کا ذریعہ بننے والے سابق فوجی سربراہ پرویز مشرف کا بھی اسی سپیشل سروسز گروپ سے تعلق تھا اور ان کے حامی یہ تاثر دیتے ہیں کہ ان کے خلاف آئین شکنی کیس پر بعض سطحوں پر تحفظات پائے جاتے ہیں، تاہم فوج نے کبھی اس بارے میں آڑے آنے کا تاثر نہیں دیا ہے۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری کیے گئے بیان کے مطابق پاکستانی فوج نے ہمیشہ قومی سلامتی اور تعمیر و ترقی میں نمایاں کردار ادا کیا ہے اور وہ یہ اہم فریضہ سر انجام دیتی رہے گی۔

چیف آف آرمی سٹاف نے کہا کہ "ملک اندرونی اور بیرونی مشکلات سے دوچار ہے اور پاک فوج تمام اداروں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے، ان حالات میں فوج کے وقار کا دفاع کیا جائے گا۔''

جنرل راحیل شریف نے سپیشل سروسز گروپ کے افسروں اور جوانوں کی دہشت گردی کے خلاف خدما ، کردار اور قربانیوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا '' پاکستانی فوج ایس ایس جی کی بہادری اور جنگی مہارت پر فخر کرتی ہے۔'' ان کا کہنا تھا '' ہماری ایس ایس جی کا شمار دنیا بھر کی بہترین سپیشل فورسز میں ہوتا ہے۔''

انہوں نے مزید کہا کہ ''ایس ایس جی کو انتہائی حساس، پیچیدہ اور دشوار صورتِ حال میں کام کرنا پڑتا ہے، اس کے باوجود ان کی کارکردگی ہمیشہ قابلِ تحسین رہی ہے۔ '' ایس ایس جی کے افسروں اور جوانوں سے بات چیت کے دوران چیف آف آرمی سٹاف کے کہا '' پاک فوج نے مادرِ وطن کے تحفظ اور سلامتی کے سلسلے میں کسی بھی قسم کی قربانی دینے سے نہ کبھی دریغ کیا اور نہ کرے گی۔''

قبل ازایں چیف آف آرمی سٹاف کا تربیلہ پہنچنے پر وائس چیف آف جنرل سٹاف میجر جنرل غیور محمود اور جنرل آفیسر کمانڈنگ ایس ایس جی میجر جنرل عابد رفیق نے خیر مقدم کیا۔