پاک فوج کا تربیتی طیارہ تباہ، پائلٹ اور شریک پائلٹ شہید

حادثہ ضلع گوجرانوالہ میں پیش آیا، تحقیقات کا حکم جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کے دارالحکومت سے تقریبا تین سو کلو میٹر کے فاصلے پر ضلع گوجرانوالہ میں ایک فوجی طیارہ گر کر تباہ ہو گیا ہے۔ طیارے کے پائلٹ اور شریک پائلٹ دونوں اس حادثے میں شہید ہو گئے ہیں۔ ابتدائی اطلاعات کے مطابق حادثہ فنی خرابی کی وجہ سے پیش آیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق فوجی طیارہ معمول کی تربیتی پرواز پر تھا ۔ واضح رہے کہ ضلع گوجرانوالہ جی ٹی روڈ پر واقعہ ہے جو پاکستان عسکری اہمیت کی اہم شہروں کے بیچوں بیچ گذرتی ہے۔ گوجرانوالہ چھاونی کے بعد کھاریاں ، جہلم اور راولپنڈی کی فوجی چھاونیوں کے بعد کامرہ اور واہ کینٹ کے اہم فوجی مراکز اسی جی ٹی روڈ پر واقع ہیں۔

اس لیے فوجی تربیت کے حوالے سے بھی یہ جی ٹی روڈ سے ملحقہ علاقے غیر معمولی اہمیت کے ہیں۔ انہی علاقوں میں پاک فضائیہ کے اہم بیسز بھی موجود ہیں۔ معلوم ہوا ہے کہ پیر کے روز طیارہ معمول کی تربیتی پرواز پر تھا کہ اچانک حادثے کا شکار ہو گیا۔ فوری طور پر حادثے کی وجہ تکینکی خرابی بتائی گئی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ پائلٹ تکنیکی خرابی کے باعث طیارے پر اپنا کنٹرول برقرا نہ رکھ سکا۔

حادثے کے فوری بعد سکیورٹی فورسز اور ریسکی وسے متعلق ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں اور علاقے کو ''کارڈن آف '' کر دیا۔ طیارے کے حادثے میں شہید ہونے والے پائلٹ اور شریک پائلٹ کی لاشیں ہسپتال منتقل کر دی گئی ہیں۔ آئی ایس پی آر کے مطابق حادثے کی تحقیقات کا حکم بھی دے دیا گیا ہے۔

پاک فوج کا ایوی ایشن کا شعبہ اپنے اہلکاروں اور افسروں کی تربیت کیلیے مشاق طیارے استعمال کرتا ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ یہ حادثہ اسی مشاق طیارے کو پیش آیا ہے۔ پاکستان میں تیار کیا گیا یہ طیارہ بعض دوسرے ملکوں میں بھی تربیت مقاصد کیلیے زیر استعمال ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں