.

حامد میر حملہ: الزام گمراہ کن ہے: ترجمان پاک فوج

واقعے کی آزادانہ تحقیقات کرائی جائیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاک فوج کے ترجمان نے ممتاز ٹی وی اینکر حامد میر پر کراچی میں کیے گئے حملے کی ذمہ داری ملک کے اہم ترین حساس ادارے آئی ایس آئی کے سربراہ اور دیگر افسروں پر عاید کرنے کی کوشش کو گمراہ کن اور افسوسناک قرار دیا ہے۔

فوج کے ترجمان ادارے آئی ایس پی آر کی طرف سے ہفتے کی رات جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ حامد میر پر حملہ قابل مذمت ہے۔ بیان میں زخمی ہونے والے اس ممتاز صحافی کی جلد صحت یابی کی بھی دعا کی گئی ہے۔

تاہم آئی ایس آئی پر الزام لگانے کو گمراہ کن قرار دیتے ہوئے مطالبہ کیا گیا ہے کہ اس واقعے کی آزادانہ تحقیقات کرائی جائیں۔ واضح رہے عالمی شہرت کے حامل حامد میر کراچی ائیر پورٹ سے شام پانچ بجے کے بعد جیو آفس جا رہے تھے کہ ان پر نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے انہیں زخمی کر دیا۔

کراچی پولیس کے سربراہ شاہد حیات کے مطابق حامد میر کو تین گولیاں لگی ہیں۔ رات گئے ہسپتال کے حکم نے ان کی حالے خطرے سے باہر بتائی ہے۔ زخمی صافی کے بھائی عامر میر نے اپنے بھائی کے حوالے سے الزام لگایا ہے کہ حامد میر حملے میں آئی ایس آئی ملوث ہے۔ ترجمان آئی ایس آئی نے الزام کو گمراہ کن قرار دیا ہے