.

کنٹرول لائن : بھارتی گولہ باری، دو شہریوں سمیت چار زخمی

پاک فوج کی جوابی کارروائی کے بعد بھارتی توپیں خاموش ہو گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارتی فوج نے جمعہ کو صبح سویرے آزاد کشمیر میں لائن آف کنٹرول اور سیالکوٹ ورکنگ باونڈری پر بلا اشتعال فائرنگ شروع کر دی ہے۔ ابتدائی اطلاعات کے مطابق لائن آف کنٹرول کے کوٹلی ، نکیال اور لنجوٹ سیکٹرز پر فائرنگ جاری ہے ،جس سے ایک بچی سمیت دو شہری زخمی ہو ئے ہیں پاکستان کے دو سکیورٹی اہکار بھی زخمی ہوگئے ہیں۔

بھارتی فوج نے ان سیکٹرز پر فائرنگ کے علاوہ مارٹر گولوں کا بھی استعمال کیا ہے۔ واضح رہے یہ علاقے عام طور پر بھارتی اشتعال انگیزیوں کا نشانہ بنتے رہتے ہیں۔

بھارتی فائرنگ شروع ہونے کے بعد پاک فوج نے بھی جوابی فائرنگ کر کے بھاری گنوں کو خاموش کرا دیا۔ جس سے بھارتی فائرنگ سے متاثرہ شہریوں نے سکھ کا سانس لیا۔

خیال رہے نریندر مودی کے وزیر اعظم بننے کے بعد بھارتی فوج کی طرف سے لائن آف کنٹرول کا یہ شدید ترین حملہ ہے۔ دوسری جانب سیالکوٹ ورکنگ باونڈری پر بھی بھارتی فوج کی طرف سے بلا اشتعال فائرنگ کی اطلاعات ملی ہیں جن ابھی تصدیق کی جا رہی ہے۔

دوسری جانب وزیر اعظم میاں نواز شریف نے اپنے دورہ بھارت کے بعد نریندر مودی کو ایک خط لکھا ہے۔ اس سے پہلے انہوں نے اپنے ہم منصب کی والدہ کے لیے سفید ساڑھی کا خوبصورت اور قیمت تحفہ بھیجا تھا۔ جبکہ نریندر مودی نے بھی میاں نواز شریف کی والدہ کے ایک قیمتی شال بھیجی تھی۔