.

سپریم کورٹ: مشرف کا ای سی ایل سے نام نکالنے کا فیصلہ معطل

سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف ایک اور اپیل دائر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کی سب سے بڑی آئینی عدالت سپریم کورٹ نے سابق صدر اور سابق فوجی سربراہ پرویز مشرف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نکالنے کا سندھ ہائی کورٹ کا فیصلہ معطل کر دیا ہے۔

سندھ ہائی کورٹ نے ای سی ایل سے نام نکالنے کا فیصلہ 12 جون کو دیا تھا۔ جسے وفاقی حکومت نے عدالت میں چیلنج کیا تھا۔

پرویز مشرف کے وکیل فروغ نسیم کے مطابق ان کے موکل کو بیرون ملک موجود اپنی 94 سالہ بیمار والدہ کی عیادت کے لیے جانا ہے۔

تاہم آج سپریم کورٹ میں حکومتی اپیل باضابطہ سماعت کے لیے منظور کرتے ہوئے سندھ ہائی کورٹ کا فیصلہ معطل کر دیا ہے۔

دریں اثنا سابق صدر کا نام ہائی کورٹ کی طرف سے نکالنے کے فیصلے کے خلاف ایک اور اپیل دائر کر دی گئی ہے۔ اس سے پہلے ممتاز قانون دان اور راولپنڈی بار کے صدر توفیق آصف نے بھی ایسی ہی ایک اپیل دائر کر رکھی ہے۔