امریکی سفیر سے پینٹاگان کی رپورٹ پر احتجاج

پاکستان کا امریکی محکمہ دفاع کی من گھڑت رپورٹ پرسخت نوٹس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

پاکستان نے دارالحکومت اسلام آباد میں متعین امریکی سفیر رچرڈ اولسن کو بدھ کے روز دفتر خارجہ میں طلب کیا ہے اور ان سے امریکی محکمہ دفاع پینٹاگان کی جانب سے جاری کردہ الزام تراشی پر مبنی ایک حالیہ رپورٹ پر سخت احتجاج کیا ہے۔

اس رپورٹ میں پاکستان پر الزام عاید کیا گیا ہے کہ اس کے علاقوں میں دہشت گردوں نے محفوظ پناہ گاہیں بنا رکھی ہیں جہاں سے وہ بھارت اور افغانستان کے خلاف حملے کرتے رہتے ہیں۔وزیراعظم کے قومی سلامتی اور خارجہ امور کے مشیر سرتاج عزیز نے پاکستان کی جانب سے امریکی سفیر سے ناقابل جواز رپورٹ پر احتجاج کیا ہے اور اس پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔

دفتر خارجہ کی ترجمان تسنیم اسلم نے ایک بیان میں بتایا ہے کہ پاکستان نے امریکا کے محکمہ دفاع کی جانب سے کانگریس کو بھیجی گئی الزامات پر مبنی رپورٹ کا سخت نوٹس لیا ہے۔اس رپورٹ کا عنوان ''افغانستان میں سلامتی اور استحکام کی جانب پیش رفت ہے''۔

ترجمان نے کہا کہ پاکستان امریکا کے ساتھ باہمی مفاد کے شعبوں میں تعاون کررہا ہے لیکن اس کے باوجود حال ہی میں جاری کردہ مذکورہ رپورٹ میں پاکستان میں دہشت گردوں کی پناہ گاہوں کی موجودگی سے متعلق بلاثبوت بے بنیاد اور من گھڑت الزامات عاید کیے گئے ہیں۔اس کے علاوہ یہ بھی الزام عاید کیا گیا ہے کہ گماشتہ فورسز پاکستانی علاقے سے افغانستان اور بھارت کے خلاف کام کررہی ہیں۔

امریکی سفیر رچرڈ اولسن پر واضح کیا گیا ہے کہ اس قسم کے الزامات پاکستان کے لیے خاص طور پر تشویش کا سبب ہیں اور یہ ایسے وقت میں عاید کیے گئے ہیں جب پاکستانی حکومت افغانستان کی سرحد کے ساتھ واقع قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں مشتبہ دہشت گردوں کے خلاف ایک جامع کارروائی کررہی ہے۔

پاک آرمی شمالی وزیرستان میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کے جنگجوؤں کے خلاف 15 جون سے آپریشن ضرب عضب کے نام سے بڑا آپریشن کررہی ہے۔واضح رہے کہ امریکا اور افغانستان میں اس کے اتحادیوں کا یہ ایک بڑا مطالبہ تھا کہ شمالی وزیرستان میں پناہ گزین طالبان اور دوسرے جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کی جائے۔

ترجمان کے بیان کے مطابق امریکی سفیر کو بتایا گیا ہے کہ واشنگٹن اور عالمی برادری نے آپریشن ضرب عضب کا خیرمقدم کیا تھا اور اس کے نتیجے میں جنگجوؤں کے کمان اور کنٹرول ڈھانچے اور ان کے محفوظ ٹھکانوں کو تباہ کردیا گیا ہے۔نیز پاک فوج بلا امتیاز تمام جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کررہی ہے۔مسٹر رچرڈ اولسن سے کہا گیا ہے کہ پاکستان امید کرتا ہے کہ ان تمام ایشوز کو ان کے درست تناظر میں دیکھا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں