پاکستان اور روس کے درمیان تاریخی فوجی معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

پاکستان اور روس نے فوجی تعاون سے متعلق ایک تاریخی معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔پاکستان کی وزارت دفاع کے مطابق یہ معاہدہ خطے میں امن اور استحکام لانے میں ایک سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔

اس معاہدے پر روسی وزیردفاع جنرل سرگئی شوئیگو اور پاکستانی وزیردفاع خواجہ محمد آصف کے درمیان ملاقات کے موقع پر دستخط کیے گئے ہیں۔خواجہ محمد آصف نے بعد میں ایک بیان میں کہا ہے کہ ''اس معاہدے کے تحت دونوں ممالک کی فوجوں کے درمیان تعلقات مزید مضبوط ہوں گے''۔

دونوں وزرائے دفاع نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ اس معاہدے سے دونوں ممالک کے درمیان خِیالات اور معلومات کے تبادلے میں اضافہ ہوگا۔اس کے علاوہ دونوں ممالک باہمی اعتماد اور بین الاقوامی سکیورٹی کو مضبوط بنانے اور انسداد دہشت گردی اور اسلحے پر کنٹرول کی سرگرمیوں میں ایک دوسرے سے تعاون کریں گے۔

پاکستانی وزارت دفاع کی جانب سے جمعرات کو جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ ''رشین فیڈریشن کے وزیردفاع ایک ایسے اہم مرحلے میں پاکستان کا دورہ کررہے ہیں جب پڑوسی ملک افغانستان میں تعینات امریکا کی قیادت میں نیٹو فورسز انخلاء کی تیاریوں میں مصروف ہیں''۔

بیان کے مطابق روسی وزیردفاع شوئیگو نے پاکستان کی مسلح افواج کی دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مہارتوں کو سراہا ہے اور کہا ہے کہ عالمی برادری اب نہ صرف اس کی تعریف کررہی ہے بلکہ وہ اس کے ساتھ کاروبار بھی کرنا چاہتی ہے۔

اس میں مزید کہا گیا ہے کہ ''اس دورے سے جہاں ایک طرف دفاعی شعبے میں دو طرفہ تعلقات میں اضافہ ہوگا ،وہیں دونوں ممالک خطے میں امن واستحکام لانے کے لیے ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کو بھی فروغ دیں گے''۔

واضح رہے کہ روس اس وقت پاکستان کے ہمسایہ مگر مخالف ملک بھارت کو اسلحہ مہیا کرنے والا سب سے بڑا ملک ہے اور بھارت دنیا میں اسلحے کا سب سے بڑا خریدار ملک ہے۔روس کی اترتاس نیوز ایجنسی نے جون میں یہ اطلاع دی تھی کہ روس نے پاکستان کو اسلحے کی فروخت پرعاید پابندی ختم کردی ہے اور اس کو لڑاکا ہیلی کاپٹروں کی فروخت کے لیے بات چیت جاری ہے۔

روسی وزیردفاع اکتالیس ارکان کے وفد کے ساتھ اسلام آباد کے دورے پر آئے ہیں اور یہ روسی فیڈریشن کے کسی وزیردفاع کا پاکستان کا پہلا دورہ ہے۔وہ پاکستانی حکام کے ساتھ وفود کی سطح کی بات چیت کے علاوہ وزیراعظم میاں نوازشریف کے ساتھ بھی ملاقات کرنے والے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں