.

بھارتی فورسز کی بلااشتعال گولہ باری ،4 پاکستانی شہید

سامبا سیکٹر میں پاکستانی فورسز کی فائرنگ سے ایک بھارتی فوجی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارت کی بارڈر سکیورٹی فورس (بی ایس ایف) نے مقبوضہ جموں وکشمیر اور پاکستان کے درمیان واقع ورکنگ باؤنڈری کے ساتھ سیال کوٹ اور نارروال اضلاع کے سرحدی علاقوں پر بلااشتعال فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے جس کے نتیجے میں چار افراد شہید ہوگئے ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) نے سوموار کو ایک بیان میں بتایا ہے کہ بھارت کی بارڈر سکیورٹی فورس نے شکر گڑھ سیکٹر کے دیہات سکھمال ،بھیکے چک اور بھورے چک میں گولہ باری کی ہے جس کے نتیجے میں مزید دو شہری شہید ہوگئے ہیں۔

قبل ازیں آئی ایس پی آر نے ایک بیان میں دو اور شہریوں کے شہید ہونے کی اطلاع دی تھی اور بتایا تھا کہ سیال کوٹ کے ظفروال اور شکرگڑھ سیکٹر میں ورکنگ باؤنڈری کے ساتھ واقع سرحدی علاقے میں بھارتی فائرنگ سے ایک خاتون اور ایک اٹھارہ سالہ لڑکا جاں بحق ہواہے جبکہ چناب رینجرز کا ایک اہلکار اور ایک شہری زخمی ہوگیا ہے۔

ورکنگ باؤنڈری پر تعینات چناب رینجرز کے ذرائع نے بتایا ہے کہ کیرول کرشنا اور پنسار چوکیوں پر تعینات بھارتی بارڈر سکیورٹی فورس کے اہلکاروں نے پاکستان کے سرحدی علاقے میں ٹھاکر پور اور کیرول چوکیوں کو فائرنگ میں نشانہ بنایا ہے۔پاکستانی فورسز نے بھارت کی بلا اشتعال فائرنگ کا بھرپور جواب دیا ہے اور دم تحریر دونوں سرحدی فورسز کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ جاری تھا۔

درایں اثناء بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا میں شائع ہونے والی ایک رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ پاکستانی رینجرز نے کٹھوعہ اور سامبا سیکٹروں میں سرحدی چوکیوں کو فائرنگ میں نشانہ بنایا ہے اور انھوں نے سیز فائر کی خلاف ورزی کی ہے۔بھارت کی بارڈر سکیورٹی فورس کے ایک افسر ڈی پارکھ نے کہا ہے کہ سامبا سیکٹر پر پاکستانی فورسز کی فائرنگ سے ایک فوجی ہلاک ہوگیا ہے۔

بھارتی ذرائع کے مطابق پاکستانی اور بھارتی فورسز کے درمیان گذشتہ چھے روز سے وقفے وقفے سے فائرنگ کا سلسلہ جاری ہے اور اختتام ہفتہ پر بھارت کے سرحدی دیہات سے ڈیڑھ ہزار افراد اپنا گھر بار چھوڑ کر محفوظ مقامات کی جانب منتقل ہوگئے تھے یا انھیں سرکاری کیمپوں میں منتقل کردیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ دونوں ممالک نے دسمبر میں سنہ 2003ء میں طے شدہ جنگ بندی معاہدے کی پاسداری کے عزم کا اظہار کیا تھا لیکن اس کے باوجود دونوں کی سرحدی فورسز کے درمیان جنوری کے آغاز ہی میں فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔گذشتہ ہفتے بھارتی فورسز نے بین الاقوامی سرحد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ضلع نارووال کے علاقے پر فائرنگ کی تھی۔