.

پاکستان سب سے قابل اعتماد دوست ہے:چین

چینی قیادت کی پاکستان کو تمام شعبوں میں تعاون کی یقین دہانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

چینی قیادت نے آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے ساتھ ملاقاتوں میں پاکستان کو تمام شعبوں میں دوطرفہ تعاون کا یقین دلایا ہے اور کہا ہے کہ پاکستان چین کا سب سے قابل اعتماد دوست ملک ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (انٹرسروسز پبلک ریلیشنز) کے سربراہ میجر جنرل عاصم سلیم باجوہ نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ ''آرمی چیف نے سوموار کے روز بیجنگ میں چینی قیادت سے اہم ملاقاتیں کی ہیں''۔

چین کی کمیونسٹ پارٹی کے پولٹ بیورو کے رکن ژیان ژو نے ان سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کو افراد سے بالا تر قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ پاکستان کی تشویش چین کی تشویش ہے۔

چینی اسٹیٹ کے سربراہ (چینی پیپلز سیاسی مشاورتی کانفرنس کے چئیرمین) یو ژینگ شینگ نے پاکستان کو سب سے قابل اعتماد دوست ملک قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ پاکستان ہمیشہ چین کے ساتھ کھڑا ہوا ہے۔ چینی حکومت اور عوام پاکستان کے ساتھ کھڑے ہوں گے اور اس کی تمام شعبوں میں مدد کریں گے۔

چینی وزیر خارجہ وانگ ژی نے جنرل راحیل شریف سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان چین کا تمام موسموں کا دوست ہے،اس کا کوئی متبادل نہیں ہے اور دونوں ممالک ایک ہی منزل کے راہی ہیں۔

جنرل راحیل شریف نے چینی قیادت کا پاکستان کی حمایت پر شکریہ ادا کیا اور کہا ہے کہ دنیا کو تبدیل ہوتے ہوئے حالات کو سمجھنا چاہیے اور دہشت گردی کے خلاف جنگ کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لیے بہتر عالمی توجہ اور تعاون کی ضرورت ہے۔

آرمی چیف نے اتوار کو پیپلز لبریشن آرمی کے ہیڈکوارٹرز میں اپنے چینی ہم منصب جنرل چی ژیانگ یو سے ملاقات کی تھی اور ان سے علاقائی سلامتی اور دفاع سے متعلق امور پر تفصیل سے تبادلہ خیال کیا تھا۔انھوں نے طویل المیعاد بنیاد پر دوطرفہ تعاون کو بڑھانے،دہشت گردی کے خاتمے کے لیے تعاون میں اضافے اور انٹیلی جنس کے تبادلے سے اتفاق کیا تھا۔

آرمی چیف نے چین کے سنٹرل ملٹری کمیشن کے وائس چئیرمین جنرل فان چانگ لانگ سے بھی ملاقات کی تھی۔ آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق جنرل فان نے پاکستان اور چین کو تزویراتی شراکت دار اور گہرے دوست ملک قرار دیا۔

جنرل فان نے پاکستان کے عوام اور مسلح افواج کے ساتھ یک جہتی کا اظہار کرتے ہوئے شمالی وزیرستان میں طالبان جنگجوؤں کے خلاف آپریشن ضرب عضب کو سراہا اور اس کو دہشت گردوں کے خلاف فیصلہ کن دلیرانہ اقدام قرار دیا۔