.

نریندر مودی کی اچانک لاہورآمد، میاں نواز شریف سے ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی جمعہ کی شام غیرعلانیہ دورے پر لاہور پہنچے ہیں۔علامہ اقبال بین الاقوامی ہوائی اڈے پر وزیراعظم میاں نواز شریف اور وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف ان کا پرتپاک استقبال کیا۔

ائیر پورٹ سے دونوں وزرائے اعظم ایک ہیلی کاپٹر پر لاہور کے نواح میں واقع رائے ونڈ میں میاں نواز شریف کی نجی رہائش گاہ کی جانب چلے گئے جہاں انھوں نے ملاقات میں دونوں ملکوں کے درمیان دوطرفہ تعلقات کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا ہے۔

نریندر مودی نے منفرد انداز میں اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر افغانستان کے دورے سے واپسی پر لاہور میں مختصر قیام کی اطلاع دی تھی۔یہ کسی بھارتی وزیراعظم کا ایک عشرے سے زیادہ عرصے کے بعد پاکستان کا پہلا دورہ ہے۔

ان کی آمد کے پیش نظر لاہور کے علامہ اقبال بین الاقوامی ہوائی اڈے کے اندر اور باہر سکیورٹی سخت کردی گئی تھی۔قبل ازیں نریندر مودی نے ٹویٹر پر ایک پیغام میں میاں نواز شریف کو ان کی سال گرہ کے موقع پر مبارک باد دی اور ان کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے نریندر مودی کے پاکستان کے مختصر دورے کے اعلان پر کہا ہے کہ ''یہ ایک مدبر سیاست دان ایسا معاملہ ہے۔ہمسائیوں کے ساتھ ایسے ہی تعلقات ہونے چاہئیں''۔

بھارتی وزیراعظم ایک روزہ دورے پر جمعہ کی صبح افغان دارالحکومت کابل پہنچے تھے جہاں انھوں نے افغان پارلیمان کی نوتعمیرشدہ عمارت کا افتتاح کیا۔بھارتی حکومت نے 2007ء میں افغانستان کی تعمیر نو کے منصوبے کے تحت یہ عمارت تعمیر کی ہے۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے وزیراعظم میاں نواز شریف اور نریندر مودی کے درمیان نومبر میں پیرس میں اقوام متحدہ کے زیر اہتمام اکیسویں موسمیاتی تبدیلی کانفرنس کے موقع پر ملاقات ہوئی تھی اور اس میں انھوں نے دوستانہ اور خوش گوار انداز میں بات چیت کی تھی۔دونوں ملکوں نے دسمبر کے اوائل میں اسلام آباد میں منعقدہ ''ہارٹ آف ایشیا'' کانفرنس کے موقع پر جامع مذاکرات کا عمل دوبارہ بحال کرنے سے اتفاق کیا تھا۔