.

سعودی وزیر خارجہ کا دورہ پاکستان ملتوی

عادل الجبیر نے 34 ملکی فوجی اتحاد پر پاکستانی حکام کو اعتماد میں لینا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر خارجہ عادل بن احمد الجبیر کا آج سے شروع ہونے والا دو روزہ دورہ پاکستان مؤخر کر دیا گیا ہے۔

ریڈیو پاکستان کے مطابق دورے کو مؤخر کرنے کی درخواست سعودی عرب نے کی ہے۔ عادل الجبیر نے اتوار کے روز پاکستان آنا تھا جہاں انہوں نے وزیر اعظم سمیت دیگر اعلی حکام سے ملاقاتیں کرنا تھیں اور اسلام آباد کو سعودی قیادت میں بننے والے 34 ملکی اسلامی اتحاد کے حوالے سے اعتماد میں لینا تھا۔

اس سے قبل پاکستانی میڈیا کے ذریعے سامنے آنے والے اطلاعات میں بتایا گیا تھا کہ سعودی عرب کے وزیر خارجہ عادل الجبیر اتوار کو اسلام آباد پہنچا تھا۔ ڈاکٹر عادل نے حال ہی میں سعودی عرب کی قیادت میں بننے والے 34 ملکی فوجی اتحاد پر پاکستان کو اعتماد میں لینے کیلئے وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف سمیت دیگر حکام سے ملاقاتیں کرنا تھیں۔

اسلام آباد دفتر خارجہ کے حکام نے پیر کو وزیر اعظم اور سعودی مہمان عادل بن احمد الجبیر کے درمیان ملاقات کی تصدیق کی ہے۔ سعودی وزیر خارجہ پاکستان کے مشیر خارجہ سرتاج عزیز سے بھی ملیں گے۔ حکام نے بتایا کہ دورے کا مقصد مشرق وسطی کے حالات پر بننے والے اتحاد پر پاکستانی قیادت سے مشاورت ہے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب نے دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے 34 اسلامی ملکوں کا اتحاد قائم کیا تھا۔ اتحاد میں پاکستان کو شامل کیے جانے پر اسلام آباد کا ملا جلا ردعمل سامنے آیا تھا۔

جہاں سیکرٹری خارجہ اعزاز چوہدری نے اتحاد میں پاکستان کا نام شامل کیے جانے پر حیرت ظاہر کی تھی، وہیں دفتر خارجہ نے بعد میں اتحاد کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ اسلام آباد اپنے کردار کے حوالے سے مزید تفصیلات کا منتظر ہے۔