.

پاکستانی وزیر اعظم 3 روزہ دورے پر سعودی عرب روانہ

آرمی چیف اور قومی سلامتی کے مشیر بھی نواز شریف کے ہمراہ سعودیہ گئے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کےوزیراعظم نواز شریف 3 روزہ سرکاری دورے پر سعودی عرب روانہ ہوگئے۔ سربراہ پاک فوج جنرل راحیل شریف اور مشیر قومی سلامتی ناصر جنجوعہ بھی ان کے ہمراہ ہیں۔

خادم الحرمین الشریفین سلمان بن عبدالعزیز آل سعود کی دعوت پر وزیراعظم نواز شریف بدھ کے روز سعودی عرب کے 3 روزہ سرکاری دورہ پر روانہ ہوگئے جہاں وہ سعودی قیادت سے ملاقاتوں سمیت دونوں ممالک کے درمیان جاری مشترکہ فوجی مشقوں 'شمال کی گرج' کی اختتامی تقریب میں بھی شرکت کریں گے۔ ان مشقوں میں پاکستان سمیت 21 ممالک حصہ لے رہے ہیں۔

دفتر خارجہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق سعودی عرب کی علاقائی سالمیت اور یکجہتی کو لاحق کسی بھی خطرے سے نمٹنے کے لیے پاکستان ہمیشہ سعودی بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑا رہے گا جب کہ پاکستان سعودی عرب کے تعلقات کو انتہائی قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔

وزیر اعظم نواز شریف نے منگل کو فوجی، انٹیلی جنس، معاشی اور خارجہ پالیسی کے مشیروں سے ملاقات کی اور اس میں بدھ سے شروع ہونے والے اپنے سعودی عرب دورے کی حکمت عملی کو حتمی شکل دی ۔

توقع ہے کہ وہ دورے کے دوران دہشت گردی کے خلاف سعودی عرب کی قیادت میں بننے والے34 ملکی اتحاد میں پاکستان کا کردار واضح کریں گے۔

پاکستان نے اب تک سعودی اتحاد میں اپنی پوزیشن اور کردار واضح نہیں کیا ہے لیکن حکومتی وزرا کئی موقعوں پر عندیہ دے چکے ہیں کہ وہ انٹیلی جینس شیئرنگ، استعداد بڑھانے، عسکری ساز و سامان فراہم کرنے اورشدت پسندی پر مشتمل پروپیگنڈا کے خلاف حکمت عملی بنانے میں معاونت کر سکتے ہیں۔