.

پاکستان کرکٹ ٹیم کی آئیرلینڈ کے خلاف 255 رنز سے شاندار جیت

ڈبلن میں کھیلے گئے پہلے ایک روزہ بین الاقوامی میچ میں میزبان ٹیم صرف 82 رنز بنا کر آؤٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کی کرکٹ ٹیم نے آئیرلینڈ کو پہلے ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ میچ میں 255 رنز سے ہرادیا ہے اور دو ایک روزہ میچوں کی سیریز میں صفر ایک کی برتری حاصل کر لی ہے۔یہ پاکستان کی رنز کے اعتبار سے سب سے بڑی فتح ہے۔

ڈبلن میں جمعرات کے روز کھیلے گئے میچ میں پاکستان کی کرکٹ ٹیم نے پہلے کھیلتے ہوئے مقررہ 47 اوورز میں 337 رنز بنائے۔جواب میں آئیرلینڈ کی پوری ٹیم چوبیسویں اوورز میں صرف 82 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔ بارش کی وجہ سے میچ 50 کے بجائے 47 اوورز تک محدود کردیا گیا تھا۔

آئیرش کپتان ڈبلیو ٹی ایس پورٹر فیلڈ نے ٹاس جیت کر پہلے پاکستان کو کھیلنے کی دعوت دی تھی۔ پاکستانی اننگز کا آغاز کوئی اچھا نہیں رہا تھا اورکپتان اظہرعلی صرف ایک رن بنا کر پویلین کو لوٹ گئے۔ان کے ساتھ اننگز کے آغاز کے لیے آنے والے شرجیل خان نے جارحانہ انداز میں بلے بازی کی اور آئرش باؤلروں کے چھکے چھڑا دیے۔

شرجیل خان نے اپنی طوفانی اننگز میں 16 چوکے اور 9 چھکے لگائے۔انھوں نے صرف 86 گیندوں پر 152 رنز بنائے اور صرف 61 گیندوں پر اپنی سینچری مکمل کی تھی۔اس طرح وہ تیزی رفتاری سے اتنی کم گیندوں پر ایک سو اسکور کرنے والے چوتھے پاکستانی بلے باز بن گئے ہیں۔

برطانیہ کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں ناکام رہنے والے محمد حفیظ تیسرے نمبر پر بلے بازی کے لیے آئے تھے۔انھوں نے احتیاط سے بیٹنگ کی اور 59 گیندوں پر 37 رنز بنا کر چیز کی گیند پر پورٹر فیلڈ کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔نوجوان بابر اعظم نے 29 رنز بنائے اور وکٹ کیپر بلے باز سرفراز احمد صرف دو رنز بنا سکے۔

تجربے کار آل راؤنڈر شعیب ملک نے بھی جارحانہ انداز میں بیٹنگ کی اور 37 گیندوں پر 57 رنز بنائے۔وہ آؤٹ نہیں ہوئے۔پاکستانی ٹیم کے تیسرے نمایاں اسکورر محمد نواز تھے۔وہ 53 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔یہ ان کا پہلا ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ میچ تھا اور وہ اپنے پہلے ہی میچ میں نصف سینچری بنانے والے پاکستان کے گیارھویں بلے باز بن گئے ہیں۔پاکستانی ٹیم نے مقررہ 47 اوورز میں چھے وکٹ کے نقصان پر 337 رنز بنائے تھے۔

اس ہدف کے تعاقب میں آئیرلینڈ کی اننگز کا آغاز اچھا نہیں رہا تھا اور کے ابتدائی بلے باز پی آر اسٹرلنگ صفر پر ہی محمد عامر کی گیند پر بولڈ ہوگئے۔اس کے بعد وقفے وقفے سے آئرش کھلاڑی آؤٹ ہوتے رہے۔اس کے سات کھلاڑی دس سے بھی کم انفرادی اسکور پر آؤٹ ہوئے اور ان میں بھی تین صفر پر پویلین کو لوٹ گئے۔صرف کپتان پورٹر فیلڈ نے 13 رنز بنائے۔وکٹ کیپر این جے او برائن 10 اور جی سی ولسن 21 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔اے آر میکبرائن 14 رنز کے ساتھ ناٹ آؤٹ رہے۔اس طرح پوری ٹیم صرف 82 رنز بنا سکی۔ آئرش کرکٹ ٹیم کا اپنی سرزمین پر کسی ایک روزہ میچ میں یہ سب سے کم اسکور ہے۔

پاکستان کی جانب سے عماد وسیم سب سے کامیاب باؤلر رہے۔انھوں نے 5.4 اوورز میں 14 رنز دے کر پانچ آئرش کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ان کے بعد عمر گل سب سے کامیاب باؤلر تھے اور انھوں نے پانچ اوور میں 23 رنز دے کر تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔وہ سولہ ماہ کے وقفے کے بعد ایک روزہ بین الاقوامی میچ کھیل رہے تھے۔انھوں نے اس میچ میں بڑی تپی تلی باؤلنگ کرائی ہے۔محمد عامر اور بائیس سالہ محمد نواز نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔اب دونوں ٹیموں کے درمیان ڈبلن ہی میں 20 اگست کو دوسرا ایک روزہ میچ کھیلا جائے گا۔