.

پاکستان کا زمین سے زمین پر مار کرنے والے ابابیل میزائل کا کامیاب تجربہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان نے منگل کے روز زمین سے زمین پر مار کرنے والے ابابیل میزائل ( ایس ایس ایم) کا کامیاب فلائٹ تجربہ کیا ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ایک پریس ریلیز کے مطابق ابابیل زیادہ سے زیادہ بائیس سو کلو میٹر تک مار کرسکتا ہے اور یہ کثیر جہت آزاد ری انٹری ٹیکنالوجی کے استعمال کے ذریعے ہر طرح کے ہتھیاروں کو لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ میزائل کی ٹیسٹ پرواز کا مقصد اس ہتھیار کے نظام کے مختلف ڈیزائن اور ٹیکنیکل پیرامیٹرز کی جانچ کرنا تھا۔

ابابیل میزائل جوہری ہتھیار لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے اور دشمن کے ریڈارز سے بچ کر مختلف اہداف کو ٹھیک ٹھیک نشانہ بنا سکتا ہے۔

آئی ایس پی آر نے پریس ریلیز میں مزید کہا ہے کہ ''ابابیل ہتھیار کے نظام کی تیاری کا مقصد خطے میں بیلسٹک میزائل دفاعی ماحول میں پاکستان کی بیلسٹک میزائلوں کی صلاحیت کو بہتر بنانا تھا''۔

ابابیل کے تجربے سے قبل گذشتہ ماہ پاکستان نے آبدوز سے چلائے جانے والے کروز میزائل ''بابر سوم'' کا کامیاب تجربہ کیا تھا۔بابر سوم 450 کلومیٹر تک مار کرنےکی صلاحیت رکھتا ہے۔ تجربے کے وقت اس میزائل نے اپنے ہدف کو ٹھیک ٹھیک نشانہ بنایا تھا۔ یہ میزائل جدید ٹیکنالوجی سے لیس ہے۔

بابر سوم بحر ہند میں کسی نامعلوم مقام سے زیر آب آبدوز سے چلایا گیا تھا۔یہ زیر آب بھی جدید رہ نما خصوصیات کا حامل ہے۔دشمن کے ریڈارز اور فضائی دفاعی نظام اس کا سراغ نہیں لگا سکتے۔ بابر سوم کروز میزائل بابر دوم کا بحری متبادل ہے۔بابر دوم زمین سے فضا میں چلایا جانے والا میزائل ہے اور دسمبر مِیں پاکستان نے اس کا کامیاب تجربہ کیا تھا۔