.

باپ نے پانچ بچے قتل کر کے خود بھی زہر پی لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے سب سے بڑے صوبہ پنجاب کے ایک جنوبی ضلع لیہ میں گھریلو حالات سے تنگ باپ نے 5 بچوں کو زہر دے کر خود بھی زہر پی لیا۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق لیہ کے چک نمبر 341 کے رہائشی 45 سالہ طارق نے گھریلو ناچاکی پر اپنے 5 بچوں کو زہر دے کر خود بھی زہر پی لیا، زہر پینے کے باعث طارق کا ایک بیٹا اور 4 لڑکیاں جاں بحق ہو گئیں جب کہ طارق کو تشویشناک حالت میں ڈی ایچ کیو اسپتال لیہ منتقل کر دیا گیا ہے۔ جاں بحق ہونے والے بچوں کی عمریں 5 سے 15 سال کے درمیان ہیں اور ان کی شناخت طیبہ، طیب، صبا، تنزیلہ اور شہناز کے ناموں سے ہوئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ طارق کی بیوی صائمہ ایک سال قبل خلع لے کر اپنے میکے چلی گئی تھی اور اس نے دوسری شادی کر لی تھی۔ طارق خود اپنے بچوں کی کفالت کرتا تھا اور بچوں کی وجہ سے فکر مند رہتا تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ واقعہ کا مقدمہ درج کر کے تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے۔