.

دوحہ میں پھنسے ہوئے 550 پاکستانی زائرین عمرہ مسقط منتقل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

قطر کے خلیجی عرب ممالک کے ساتھ تنازع کے بعد دوحہ کے ہوائی اڈے پر پھنس جانے والے ساڑھے پانچ سو پاکستانیوں کو مسقط منتقل کردیا گیا ہے۔

پاکستان زائرین عمرے کی ادائی کے لیے قطر ائیر لائنز کے ذریعے دوحہ کے راستے سعودی عرب جارہے تھے۔اس دوران میں سوموار کے روز سعودی عرب اور دوسرے دوخلیجی ممالک نے قطر کے ساتھ اپنے ہر طرح کے تعلقات منقطع کر لیے تھے اور سعودی عرب نے قطر کے ساتھ اپنی بری ،بحری اور فضائی سرحدیں بھی بند کردی تھیں اور اس کے طیاروں کے مملکت کے کسی ہوائی اڈے پر اترنے پر پابندی عاید کردی تھی۔

دوحہ میں پاکستانی سفارت خانے کی ایک افسر سعدیہ خرم کے مطابق ان میں سے چار سو پاکستانیوں کو قطر ائیرویز کے ذریعے منگل کی صبح اومان کے شہر مسقط منتقل کیا گیا ہے اور ڈیڑھ سو پاکستانیوں کو اومان کے طیارے کے ذریعے مسقط لے جایا گیا ہے اور پھر وہاں سے اومان کے طیارے سے ہی انھیں سعودی عرب لے جایا جائے گا۔

پاکستانی حکام نے اپنے شہریوں کو قطر ائیر ویز کے ذریعے سعودی عرب جانے یا کسی بھی اور فضائی کمپنی کی پرواز کے ذریعے قطر جانے سے گریز کی ہدایت کی ہے ۔

سعدیہ خرم نے مزید بتایا ہے کہ دوحہ میں پاکستانی مشن اومان اور سعودی عرب میں اپنے ملک کے سفارت خانوں سے رابطے میں رہا ہے اور مسقط میں مسافروں کو سہولت مہیا کرنے کے لیے سفارت خانے کا عملہ ہوائی اڈے پر موجود تھا۔