.

فلسطینی سفیر کو حافظ سعید کے ہمراہ 'القدس' سے اظہار یکجہتی مہنگا پڑ گیا

پاکستان میں تعینات فلسطینی سفیر ولید ابوعلی کی رام اللہ طلبی: بھارتی میڈیا کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کی تقریبا ایک درجن سے زائد دینی وسیاسی جماعتوں پر مشتمل غیر سیاسی اتحاد دفاع پاکستان کونسل کے زیر اہتمام منعقد ہونے والی 'دفاع القدس کانفرنس' میں شرکت کرنے پاکستان میں تعینات فلسطینی سفیر ولید ابو علی کو مہنگی پڑ گئی۔ بھارت کے شدید احتجاج کے بعد صدر محمود عباس کے حکم پر پاکستان میں فلسطینی سفیر کو رام اللہ طلب کر لیا گیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق فلسطینی سفیر ولید ابوعلی راولپنڈی میں منعقدہ کانفرنس میں لشکر طیبہ کے سربراہ حافظ محمد سعید کے ساتھ سٹیج پر بیٹھے جس پر بھارت نے سخت غم وغصے کا اظہار کیا۔

ہندوستان ٹائمز کے مطابق فلسطین کے ایک سرکاری افسر نے بتایا ہے کہ سفیر کو پاکستان سے واپس بلا لیا گیا ہے اور انہیں رام اللہ ہیڈکوارٹر رپورٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ افسر کے بقول فلسطین عالمی برادری کا حصہ ہے اور دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے پرعزم ہے۔

واضح رہے کہ بھارت نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے یروشیلم کو فلسطین کا دارالحکومت قرار دینے کی مخالفت کی تھی۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت نے باضابطہ طور پر سفیر ولید ابو علی کی حافظ محمد سعید کے ساتھ ملاقات کے بارے میں اپنی تشویش سے فلسطین کے وزارت خارجہ کو آگاہ کیا تھا۔