.

آزاد کشمیر میں بھارتی فوج کی گولہ باری سے چار پاکستانی فوجی شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے زیر انتظام ریاست آزاد جموں وکشمیر میں کنٹرول لائن کے پار سے بھارتی فوج کی گولہ باری سے چار پاکستانی فوجی شہید ہوگئے ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر ) نے سوموار کو ایک بیان میں بتایا ہے کہ بھارتی فوج نے آزاد کشمیر کے جندروٹ سیکٹر میں بلااشتعال بھاری گولہ باری کی ہے۔اس وقت وہاں پاکستانی فوجی ایک کمیونیکیشن لائن کی مرمت میں مصروف تھے اور انھیں اس حملے میں نشانہ بنایا گیا ہے۔

آئی ایس پی آر نے اپنے بیان میں مزید کہا ہے کہ پاکستانی فوجیوں کی جوابی گولہ باری سے تین بھارتی فوجی ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔

پاکستان کے دفتر خارجہ کے مطابق بھارتی فورسز نے 2018ء کے آغاز کے بعد سے اب تک لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باؤنڈری سے جنگ بندی کی 70 سے زیادہ خلاف ورزیاں کی ہیں۔ان واقعات میں ایک پاکستانی شہری شہید اور پانچ زخمی ہوگئے ہیں۔

یاد رہے کہ پاکستان رینجرز اور بھارت کی بارڈر سکیورٹی فورسز کی قیادت نے نومبر 2017ء میں 2003ء میں دونوں ملکوں کے درمیان طے شدہ جنگ بندی سمجھوتے کی ’’ روح‘‘ کو بحال کرنے سے اتفاق کیا تھا تاکہ بے گناہ شہریوں کی زندگیوں کو بچایا جاسکے۔

پاکستان کی ڈیزاسسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل ظہیر الدین قریشی کے مطابق بھارتی فورسز کی 2017ء کی پہلی ششماہی میں پاکستانی علاقوں پر بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری سے 832 قیمتی انسانی جانیں چلی گئی تھیں، تین ہزار سے زیادہ افراد زخمی ہوئے تھے اور 3300 سے زیادہ مکانوں کو نقصان پہنچا تھا۔ ان میں سے بیشتر جزوی یا مکمل طور پر تباہ ہوگئے تھے۔