.

میر ہزار خا​ن نے پہلے اہلیہ کو قتل کیا پھر خودکشی کی: پولیس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کی پراسرار موت کے بعد کرائم سین سے شواہد اکٹھے کر لیے گئے۔ ڈی آئی جی ساؤتھ آزاد خان کا کہنا ہے کہ لگتا ہے پہلے میر ہزار خا​ن نے اہلیہ کو قتل کیا پھر خودکشی کی ہے۔

میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کے قتل کے معاملہ پر ڈی آئی جی ساوتھ آزاد خان نے پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے بتایا ہے کہ کل دوپہر کو ڈھائی بجے درخشاں تھانے کو میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کی لاشیں ملنے کی اطلاع موصول ہوئی۔

پولیس موقع پر پہنچی تو خیابان جانباز پر واقع بنگلے کے پہلی منزل پر بنے اسٹڈی روم میں دونوں کی لاشیں موجو دتھیں، جس کے بعد پولیس نے جائے وقوعہ سے شواہد اکھٹے کرنا شروع کئے۔

ڈی آئی جی ساوتھ آزاد خان نے بتایاکہ شواہد کے مطابق دونوں کی موت گولی لگنے سے واقع ہوئی۔ میر ہزار خان بجارانی کو ایک گولی سر پر لگی تھی جبکہ فریحہ رزاق کو تین گولیاں لگی تھیںجن میں سے ایک گولی سر پر اور 2 پیٹ میں لگی تھی۔

آزاد خان کے مطابق کرائم سین سے فارنسک ٹیم نے فنگر پرنٹس اور دیگر تمام ثبوت اکھٹے کر لئے ہیں اور گھر میں موجود سی سی ٹی وی کیمرے کا ڈی وی آر بھی قبضے میں لے لیا ہے۔ اس کے علاوہ کمرے میں موجود خون کے نمونے بھی محفوظ کر لئے گئے ہیں۔

ڈی آئی جی ساوتھ نے بتایا کہ فائرنگ 30 بور پستول سے کی گئی تھی اور جائے وقوعہ سے 4 خول اور 2 گولیاں ملی ہیں۔

آزاد خان نے کہا کہ واردات کے بعد 2 پولیس اہلکاروں سمیت 6 ملازمین سے بیانات لئے گئے ہیں۔ تمام ملازمین نے اپنے ابتدائی بیانات پولیس کو قلم بند کرا دیئے ہیں۔ملازمین کے بیانات کے مطابق دونوں میں کئی روز سے ناچاقی چل رہی تھی۔

ڈی آئی جی ساؤتھ آزاد خان کے مطابق وقوعہ کے وقت گھر اندر سے بند تھا۔واقعے کے بعد بچوں نے ملازمین کے ساتھ مل کر دروازہ توڑا۔

آزاد خان کے مطابق واقعہ کی ہر پہلوسے ابھی بھی تحقیقات جاری ہے۔

میر ہزار خان کی کشمور کے علاقے کرم پور میں تدفین کی جائے گی جبکہ اہلیہ فریحہ کی میت پی این شفا اسپتال منتقل کر دی گئی، انہیں آج کراچی میں ہی سپرد خاک کیا جائے گا۔