ریاض، پاکستان کے کئی شعبوں میں سرمایہ کاری کرے گا: عبدالرحمان الحربی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے نائب وزیر برائے بیرونی تجارت عبدالرحمان الحربی نے کہا ہے کہ سعودی عرب پاکستان کو سرمایہ کاری کیلئے بڑی اہمیت دیتا ہے۔ انہوں نے یہ بات ریاض میں تجارت اور سرمایہ کاری کے بارے میں پاک سعودی مشترکہ ورکنگ گروپ کے پہلے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

وزارت تجارت کے پریس ریلیز کے مطابق پاکستانی وفد کی قیادت سیکریٹری تجارت محمد یونس ڈھاگا نے کی۔ بورڈ آف انوسٹمنٹ "بی او آئی" کے ایڈیشنل سیکریٹری سلیم رانجھا اور سعودی عرب میں پاکستان کے سفیر خان ہشام بن صدیق وفد میں شامل تھے۔ اس موقع پر پاکستان میں سعودی سفیر نواف سعید احمد المالکی اور ساتھ ہی ٹیکنیکل ٹیم بھی موجود تھی۔ دونوں ملکوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان تجارت اور سرمایہ کاری کے تعلقات کو مزید مضبوط بنایا جائے گا اور گذشتہ ماہ اسلام آباد میں ہونے والے پاک سعودی مشترکہ وزارتی کمیشن کے اجلاس میں جو مفاہمت ہوئی تھی اس کے مطابق یہ کام انجام پائے گا۔

سعودی حکام نے اس بات کا اعتراف کیا کہ پاکستان میں مجموعی سرمایہ کاری کا ماحول فروغ پا رہا ہے۔ انہوں نے پاکستان میں پیٹرو کیمیکل، ڈیری، لائیو اسٹاک اور کانکنی سمیت متعدد شعبوں میں سرمایہ کاری میں دلچسپی ظاہر کی۔ اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ سعودی عرب ایک ٹیکنیکل ٹیم پاکستان بھیجے گا جو ان شعبوں کی نشاندہی کریگی جہاں سرمایہ کاری کے مواقع پائے جاتے ہیں۔

اجلاس میں دنوں ملکوں نے اس بات پر اتفاق کیا کہ 2 ماہ میں پاک سعودی مشترکہ بزنس کونسل کو فعال کیا جائے گا۔ یہ بھی طے پایا کہ پاکستان سال رواں کے دوران ہی سعودی عرب میں نمائش کا اہتمام کرے گا۔ تجارتی تعلقات کو تیز کرنے کے لئے اس بات پر بھی اتفاق ہوا کہ ویزہ فیس، کمپنیوں کی رجسٹریشن، ترسیل میں تاخیر جیسے معاملات پر قابو پا کر باہمی تجارت کو فروغ دیا جائے گا۔

محمد یونس ڈھاگا نے اجلاس میں مختلف اہم امور پر ہونے والی پیش رفت پر مسرت ظاہر کی اور پاکستان میں مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کرنے والے سعودی سرمایہ کاروں کو ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔ مشترکہ ورکنگ گروپ کا اجلاس اپریل 2018ء میں اسلام آباد میں ہو گا جہاں ان شعبوں کی نشاندہی ہوگی جن میں سرمایہ کاری کی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں