.

مصر: پاک فوج کے جوائنٹ چیف آف اسٹاف کی صدرالسیسی سے ملاقات

ملاقات میں سیکیورٹی سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر بات چیت کی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی کے چیئرمین جنرل زبیر محمود حیات نے مصر کے صدر عبدالفتاح السیسی سے انسداد دہشت گردی اور مذہبی فلسفے کی تجدید پر تبادلہ خیال کیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مصری ایوان صدر کے ترجمان بسام راضی نے بتایا کہ جنرل زبیر محمود حیات سے ملاقات کے دوران صدر السیسی نے پاکستان کے ساتھ تمام شعبوں میں تعلقات کےفروغ کی خواہش کا اظہار کیا اور علاقائی تنازعات کے حل میں ہم آہنگی پیدا کرنے اور ایک دوسرے سے صلاح مشورہ کرنے کے ساتھ باہمی دلچسپی کے امورپر تبادلہ خیال کیا گیا۔

دونوں رہ نماؤں کے درمیان ہونے والی ملاقات میں سر فہرست انسداد دہشت گردی کے لیے مل کر کوششیں کرنے پر بات چیت کی گئی۔ دونوں رہ نماؤں نے اتفاق کیا کہ دہشت گردی پاکستان اور مصر دونوں کا مشترکہ چیلنج ہے۔

ملاقات میں دو طرفہ فوجی تعاون کے فروغ، مشرق وسطیٰ اور عالم اسلام کے سلگتے مسائل پربھی تفصیلی بات چیت ہوئی۔ جنرل زبیر محمود حیات اور صدر السیسی نے دہشت گردی کے خلاف مل کر لڑنے، علاقائی اور عالمی امن وسلامتی کے لیے مشترکہ مساعی جاری رکھنے اور دہشت گرد گروپوں کی مالی معاونت روکنے پر اتفاق کیا گیا۔

ایوان صدر کے ترجمان کے مطابق پاکستانی فوج کے سینیر عہدیدار سے ملاقات میں صدر السیسی نے دہشت گردوں کی جانب سے اسلام کی غلط تعبیر پیش کرنے کے جواب میں اسلام کی درست اور حقیقی تعبیر پیش کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گرد اپنے مذموم عزائم کے لیے اسلامی تعلیمات کا سہارات لیتے ہیں اور اسلام کے نام پر سیاسی مقاصد اور اہداف حاصل کرنا چاہتے ہیں۔

دوسری جانب جنرل زبیر محمود حیات نے اپنے دورہ مصر پر مسرت کا اظہار کیا۔ انہوں نے یقین دلایا کہ پاکستان مصر کے ساتھ دو طرفہ تعاون کے فروغ کے لیے اقدامات کرے گا۔ انہوں نے دہشت گردی کے خلاف مصری حکومت کی کامیاب مساعی پر قاہرہ کی خدمات کو سراہا بالخصوص حال ہی میں جزیرہ نما سیناء میں دہشت گردوں کے خلاف کیے گئے کامیاب فوجی آپریشن پر مصری فوج کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا۔