.

پاکستان کا بابر کروز میزائل کا کامیاب تجربہ

کروز میزائل نچلی پرواز کے ساتھ مختلف وار ہیڈ لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان نے بابر کروز میزائل کا کامیاب تجربہ کیا ہے. بابرکروز میزائل 700 کلومیٹر تک پانی اور خشکی پر ہدف کو کامیابی سے نشانا بنانے کی صلاحیت کا حامل ہے. بابر کروز میزائل میں جدید ترین نیوی گیشن سسٹم نصب ہے۔ کروز میزائل نچلی پرواز کے ساتھ مختلف وار ہیڈ لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ کامیاب تجربے پر صدر، وزیراعظم اور عسکری قیادت نے سائنسدانوں اور انجینئرز کو مبارکباد دی ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق ہفتے کو پاکستان نے بابر کروز میزائل کا کامیاب تجربہ کیا ہے. میزائل ویپن سسٹم 1 سے لیس ہے جو خشکی اور پانی میں 700 کلومیٹر تک ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔ میزائل سٹیلتھ ٹکنالوجی کا حامل ہے جو مختلف قسم کے وار ہیڈ لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ جدید آلات سیلیس یہ میزائل جی پی ایس کے بغیر بھی اپنے ہدف تک پہنچ سکتا ہے۔ جدید ترین نیوی گیشن سسٹم نصب ہے اور 700 کلومیٹر تک ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔ اس تجربے سے پاکستان کے دفاع میں مزید مضبوطی آئے گی۔

ڈائریکٹر جنرل، اسٹریٹجک پلانز ڈویژنز، چیئرمین نیسکام، اسٹریٹجک پلانز ڈویژنز کے سینئر افسران، اسٹریٹجک فورسز، سائنسدانوں اور انجینئرز نے اس کامیاب تجربے کو دیکھا۔ صدر، وزیراعظم، جوائنٹ چیفس آف اسٹاف، تینوں افواج کے سربراہ نے کروز میزائل کے کامیاب تجربے پر سائنسدانوں اور انجینئرز کو مبارک باد پیش کی ہے۔