وزیراعظم اور آرمی چیف کی خلیج کی ڈھال مشقوں کی اختتامی تقریب میں شرکت

مشقوں کا مقصد خطے کے ممالک کے مابین فوجی اور سیکیورٹی تعاون کو مستحکم بنانا اور روابط کا فروغ تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی اور آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ نے سعودی عرب میں جاری 24 ملکی مشترکہ فوج مشق خلیج کی ڈھال ون کی اختتامی تقریب میں شرکت کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے سعودی عرب میں 24 ملکی مشترکہ فوجی مشقوں کی اختتامی تقریب میں شرکت کی۔ وزیراعظم کے ہمراہ وزیرِ دفاع خرم دستگیر اور سعودی عرب میں تعینات پاکستانی سفیر حشام بن صدیق بھی تھے۔ تقریب میں اسلامی عسکری اتحاد کی افواج کے سربراہ ریٹائرڈ جنرل راحیل شریف اور وزیرِ اعظم شاہد خاقان عباسی کے ساتھ نشست پر بنگلہ دیش کی وزیر اعظم حسینہ واجد بھی موجود تھیں۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے سعودی عرب میں جنگی مشقوں کا معائنہ کیا۔

سعودی عرب میں ایک ماہ تک جاری رہنے والی مشقوں کو خلیج کی ڈھال ون کا نام دیا گیا۔ ان مشقوں کو مختلف ممالک کی افواج، ہتھیاروں کے نظام اور پیشہ ورانہ مہم جوئی کے حوالے سے خطے میں سب سے بڑی فوجی مشق سمجھا جاتا ہے۔ پاکستان کی جانب سے اسپیشل سروسز گروپ (ایس ایس جی) کے کمانڈوز، پاک فضائیہ کے سی ون 30 اور جے ایف 17 تھنڈر لڑاکا طیارے مشقوں کا حصہ رہے۔ مشقوں کا مقصد خطے کے ممالک کے مابین فوجی اور سیکیورٹی تعاون کو مستحکم اور روابط کا فروغ تھا۔

اس سے قبل گذشتہ روز وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سعودی عرب پہنچے تھے۔ ان مشقوں میں پاکستان کے علاوہ دیگر ممالک نے شرکت کی جس میں پا ک فوج کی کارکردگی کو سراہا گیا۔ مشترکہ مشقیں سعودی عرب کے ساحلی شہر ظہران میں ہوئیں، جس میں پاکستان کے بری، بحری اور فضائی افواج کے دستے شریک ہوئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں