’’بعض عالمی قوتیں پاکستان میں فرقہ وار تشدد اور انتشار پیدا کرنا چاہتی ہیں‘‘

انتہا پسند اور دہشت گرد تنظیموں کے ناپاک عزائم کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے: حافظ طاہر اشرفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین اور وفاق المساجد پاکستان کے صدر حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا ہے کہ بعض عالمی قوتیں پاکستان میں فرقہ وار تشدد اور انتشار پیدا کرنا چاہتی ہیں ، لیکن ملک کے علماء و مشائخ ان سازشوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔

انھوں نے سوموار کو فیصل آباد میں ایک نیوز کانفرنس میں بتایا ہے کہ پاکستان علماء کونسل ملک سے انتہا پسندی ، دہشت گردی ، فرقہ وار تشدد کے خاتمے اور عالم اسلام کے مسائل پر مشترکہ مؤقف اپنانے کی غرض سے 23 اپریل کو لاہور میں تیسری عالمی پیغام اسلام کانفرنس منعقد کرے گی ۔اس کانفرنس میں مختلف اسلامی ممالک کے مندوبین ، غیر ملکی سفراء اور ملک بھر سے پانچ ہزار سے زائد علماء شریک ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان علماء کونسل کی جدوجہد امن اور سلامتی کے لیے ہے۔ وہ کوئٹہ میں مسیحی برادری پر حملے کی شدید مذمت کرتی ہے اور افغانستان کی افواج کی طرف سے پاکستانی سرحد کی مسلسل خلاف ورزیوں پر بھرپور احتجاج کرتی ہے۔

انھوں نے کہا کہ کوئٹہ میں مسیحی برادری پر حملہ قابلِ مذمت اور قابلِ افسوس ہے ، پاکستان میں رہنے والے غیر مسلموں کو تحفظ فراہم کرنا حکومت اور مسلمانوں کی ذمہ داری ہے ، اسلام غیر مسلموں کے حقوق کا مکمل محافظ ہے ، انتہا پسنداور دہشت گرد تنظیموں کے عزائم کو پاکستان میں کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔

حافظ محمد طاہر محمودا شرفی نے کہا کہ عالم اسلام اس وقت سخت بحران کا شکار ہے ، شام سے لے کر کشمیر تک مسلمانوں کا خون بہایا جا رہا ہے ، شام میں کیمیائی ہتھیاروں سے بے گناہ شہریوں کا قتل عام کسی بھی صورت قبول نہیں کیا جا سکتا۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب میں منعقدہ عرب سربراہ کانفرنس کے فیصلے مسلمانوں کے جذبات کی ترجمانی کرتے ہیں، عالم اسلام ان فیصلوں پر مکمل عملدرآمد چاہتا ہے ۔

ان کا کہنا تھا کہ پاک فوج کے خلاف مہم چلانے والے دراصل مودی کا ایجنڈا پورا کرنا چاہتے ہیں۔ ، پاکستان علماء کونسل بھی یہ مطالبہ کرتی ہے کہ لاپتا افراد سامنے لائے جائیں، بے گناہ مذہبی و سیاسی کارکنوں کو فورتھ شیڈول سے نکالا جائے ، لیکن مظلومین کے نام پر پاک فوج کے خلاف کسی کو مہم نہیں چلانے دیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان علماء کونسل نے انتخابات میں حصہ لینے کی بھرپور تیاری کر رکھی ہے ، جلد ایک سیاسی و مذہبی اتحاد کی قوم کو خوش خبری ملے گی، سیاسی قوتوں کو برداشت اور اعتدال کا مظاہرہ کرنا چاہیے ، عدلیہ کے خلاف کسی قسم کی مہم کامیاب نہیں ہو گی ، ججوں کو مکمل تحفظ فراہم کیا جانا چاہیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں