.

وزیراعظم نے نئے اسلام آباد انٹرنیشنل ایئرپورٹ کا افتتاح کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی نے نئے اسلام آباد ایئرپورٹ کا باضابطہ افتتاح کردیا. اس موقع پر ان کے ہمراہ وفاقی وزرا، سفارت کار اور دیگر اہم شخصیات بھی موجود تھیں۔

خیال رہے کہ اعلان کی گئی تاریخ سے دو دن قبل ہی اسلام آباد ایئرپورٹ کا افتتاح کیا گیا جبکہ 3 مئی بروز جمعرات سے ایئر پورٹ سے پروازوں کی آمدورفت کا سلسلہ باقاعدہ شروع کیا جائے گا۔

چار ہزار دو سو اڑتیس ایکڑ رقبے پر محیط ملک کا پہلا گرین فیلڈ ہوائی اڈہ سفری سہولیات کے لحاظ سے یہ ملک کا سب سے بڑا ایئرپورٹ ہے جس پر 90لاکھ کے قریب مسافروں کی گنجائش ہے جس پر جمعرات سے ہوائی اڈے سے پروازوں کا باقاعدہ آغاز ہوگیا۔

شاہد خاقان عباسی نے منگل کے روز نیو انٹرنیشنل ایئرپورٹ کا افتتاح کیا۔ نیا ہوائی اڈہ عالمی معیار کا پہلا گرین فیلڈ ایئر پورٹ ہے۔ ایئربس پی کے 320 نے نئے ایئرپورٹ پر لینڈ کیا جبکہ ایئر پورٹ سے پہلی پرواز ساڑھے بارہ بجے کراچی کے لئے روانہ ہوئی، جمعرات سے ہوائی اڈے سے پروازوں کا باقاعدہ آغاز ہو جائے گا۔

پاکستان ایئرلائن کے ترجمان کے مطابق پی آئی اے کی پرواز پی کے 300 کراچی سے اسلام آباد کے لیے روانہ ہوئی جس نے 11 بجے نیو اسلام آباد ایئر پورٹ پر لینڈ کیا جبکہ قومی ایئرلائن کی پہلی پروازدن ساڑھے بارہ بجے کراچی روانہ ہوئی۔

ترجمان پی آئی اے کے مطابق کیپٹن فرخ مرزا پی کے 300 کے کپتان، زوہیر الیاس فرسٹ آفیسر تھے۔ نیو اسلام آباد ایئر پورٹ پر صدر پی آئی اے اور سی ای او مشرف رسول نے مسافروں کا استقبال کیا۔

جدید ترین سہولیات سے آراستہ 2 رن وے والا نیو اسلام آباد انٹرنیشنل ایئرپورٹ کی عمارت کو جہاز کے پروں کے طرز پر بنایا گیا ہے جہاں بیک وقت 28 ہوائی جہازوں کے مسافروں کو سہولیات مہیا کی جا سکتی ہیں۔

اسلام آباد کا نیا ایئرپورٹ خطے کے ایوی ایشن حب کے طور پر ڈیزائن کیا گیا ہے جہاں مسافروں کی سہولت کے لیے 3 شاپنگ مالز، گالف کورس، سینما گھر، بڑا اسپتال، کنونشن سینٹر، ڈیوٹی فری شاپس اور ریسٹورنٹ بھی موجود ہیں۔

نئے ایئرپورٹ پر بین الاقوامی معیار کے مطابق سیلف چیک ان کانٹرز، لانگ ٹائم پارکنگ، 8 فائر کریش ٹینڈرز، جدید ترین ایئرفیلڈ، طیاروں کو فنی سہولیات فراہم کرنے کے لیے جدید ترین ایم آر او سسٹم اور الگ کارگو ٹرمینل بھی بنایا گیا ہے۔

ایئرپورٹ پر کارگو ویلیج بھی بنایا گیا ہے جبکہ گراونڈ ہینڈلنگ ایجنسیز نے کام شروع کر دیا ہے۔ نیو اسلام آباد ایئرپورٹ کا رن وے ساڑھے 3 کلومیٹر لمبا ہے جو پاکستان کا سب سے بڑا رن وے ہے جہاں اے تھری ایٹی سمیت دنیا کا بڑے سے بڑا ہوائی جہاز دھند میں بھی لینڈ کر سکتا ہے۔

پاکستان کے سب سے بڑے ایئرپورٹ کو محفوظ بنانے کے لیے ایئر پورٹ سیکیورٹی فورس کے 4 ہزار جوان اور رینجرز کے دستے تعینات ہوں گے۔ اس کے علاوہ جدید ترین لیزر سیکیورٹی سسٹم بھی نصب کیا گیا ہے۔