شادی سے انکار پر فیصل آباد میں بس کی خاتون میزبان دن دیہاڑے قتل

مہوش گھر کی واحد کفیل تھی، جس نے عزت بچانے کیلئے جان دی: والدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

صوبہ پنجاب کے ضلع فیصل آباد میں نجی بس سروس کے سیکیورٹی گارڈ نے دورانِ سفر خاتون میزبان 19 سالہ مہوش ارشد کو میبنہ طور پر ہراساں کیا اور بعد ازاں بس ٹرمنل پر پہنچ کر اسے فائرنگ کر کے قتل کر دیا۔

واقعے کے حوالے سے منظر عام پر آنے والی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ دوران سفر سیکیورٹی گارڈ نے خاتون میزبان کا ہاتھ پکڑ رکھا ہے اور ان سے بدتمیزی کررہا ہے۔

اس دوران خاتون کی جانب سے کچھ کہنے پر سیکیورٹی گارڈ نے خاتون میزبان کے منہ پر تھپڑ دے مارا اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں۔

سیکیورٹی گارڈ کی جانب سے تھپڑ مارے جارنے پر خاتون میزبان نے اسے برا بھلا کہا جبکہ بس میں سوار مسافروں کی جانب سے سیکیورٹی گارڈ اور خاتون میزبان کے درمیان جاری تنازع پر دونوں کو سمجھانے کی کوشش کی گئی۔ خیال رہے کہ ویڈیو میں تنازع کی وجہ سامنے نہیں آرہی ہے۔

بعد ازاں بس ٹرمنل پر لگے سی سی ٹی وی کیمرہ کی ریکارڈنگ میں دیکھا جا سکتا ہے کہ خاتون ٹرمنل کے قریب پیدل چلنے والوں کے لیے بنائے گئے پل کی سیڑھیاں چڑھ رہی ہیں کہ اس دوران کسی شخص نے آ کر خاتون میزبان کو روکا اور ان کا ہاتھ پکڑ لیا اور معمولی تلخ کلامی کے بعد خاتون کو گولی مار دی۔

واضح رہے کہ سی سی ٹی وی فوٹیج میں فائرنگ کرنے والے شخص کو نہیں دیکھا جا سکتا جبکہ خاتون کو گولی لگنے کے بعد چیخ پکار کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔

بعد ازاں پولیس نے مقتولہ کے والد کی مدعیت میں واقعے کا مقدمہ درج کرلیا جس کے مطابق مقتولہ مہوش ارشد کی عمر 18 سے 19 سال کے درمیان تھی جو الہلال ٹریول میں بطور میزبان نوکری کر رہی تھی۔

میڈیا سے گفتگو میں مقتولہ مہوش کی والدہ کا کہنا تھا کہ اگر ان کی بیٹی کو بروقت طبی امداد دی جاتی تو اس کی جان بچ سکتی تھی۔ ساتھ ہی انہوں نے مہوش کے قاتل کو عبرت ناک سزا دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ملزم کے خلاف مقدمے میں انسداد دہشت گردی ایکٹ کی دفعات بھی شامل کی جائیں۔

مقتولہ مہوش کے نانا محمد حسین بھی اس موقع پر غمزدہ نظر آئے، جنہوں نے سوال کیا کہ ان نواسی کے خون کا حساب کون دے گا۔ گذشتہ روز نگران وزیراعلیٰ پنجاب پروفیسر حسن عسکری نے بھی واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب کلیم امام سے رپورٹ طلب کی تھی۔ نگران وزیر اعلیٰ نے مقتولہ مہوش کے خاندان کو ہر قیمت پر انصاف دینے کے عزم کا بھی اظہار کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں