شاہد خاقان، مہتاب عباسی ، عمران خان، مشرف اور فاروق ستار کے کاغذات ِ نامزدگی مسترد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
7 منٹس read

الیکشن کمیشن پاکستان نے عام انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کا عمل مکمل کر لیا ہے اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی ، سابق صدر پرویز مشرف ، پاکستان تحریک ِ انصاف ( پی ٹی آئی ) کے سربراہ عمران خان اور متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم ) کے امیدوار ڈاکٹر فاروق ستار کے کاغذاتِ نامزدگی متعلقہ ریٹرننگ افسروں نے مسترد کردیے ہیں۔ وہ اب ان فیصلوں کے خلاف ایپلیٹ ٹرائبیونل کے ہاں اپیل دائر کرسکتے ہیں۔

پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے لیڈر شاہد خاقان عباسی اور ان کے کورنگ امیدوار سردار مہتاب خان عباسی نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے حلقہ این اے 53 سے کاغذات ِ نامزدگی جمع کرائے تھے۔اس حلقہ کے ریٹرننگ افسر محمد عدنان نے ان کے کاغذات فنی بنیاد پر مسترد کیے ہیں اور کہا ہے کہ انھوں نے اپنی دستاویزات کے ساتھ ٹیکسوں کے گوشوارے جمع نہیں کرائے تھے۔البتہ ریٹرننگ افسر نے ان کے کاغذات ِ نامزدگی کے خلاف دائر کردہ تمام اعتراضات کو مسترد کردیا تھا۔

پی ایم ایل این کے صدر اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 3 سوات اور این اے 192 ڈیرہ غازی خان سے جمع کرائے گئے کاغذات ِ نامزدگی منظور کر لیے گئے ہیں۔

پی ٹی آئی کے چئیرمین عمران خان کے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 35 بنوں ، این اے 243 کراچی اور این اے 131 لاہور سے ریٹرننگ افسر وں نے کاغذات نامزدگی منظور کر لیے ہیں جبکہ حلقہ این اے 53 اسلام آباد اور این اے 95 میانوالی سے کاغذات نامزدگی بالترتیب نامکمل ہونے اور فنی بنیاد پر مسترد کر دیے ہیں۔

انھوں نے عدالتِ عظمیٰ کی ہدایت کے مطابق قومی اسمبلی میں بطور رکن اپنی سابقہ پانچ سالہ کارکردگی سے متعلق بیان حلفی جمع نہیں کرایا تھا۔این اے 53 سے پی ٹی آئی کی منحرف رکن عائشہ گلالئی کے کاغذات ِ نامزدگی بھی مسترد کردیے گئے ہیں۔

پاکستا ن پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلال بھٹو زرداری کے کاغذات نامزدگی قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 8 مالا کنڈ اور این اے 246 کراچی سے منظور کر لیے گئے ہیں۔ یہ حلقہ کراچی کے علاقے لیاری پر مشتمل ہے اور یہ پیپلز پارٹی کا روایتی طور پر مضبوط گڑھ سمجھا جاتا ہے۔

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 245 سے ایم کیو ایم پاکستان کے امیدوار ڈاکٹر فاروق ستار کے کاغذات نامزدگی مستر د کردیے گئے ہیں۔ ان کے خلاف دو مقدمات درج ہیں اور وہ عدالت میں پیش نہ ہونے پر مفرور قرار دیے گئے تھے لیکن انھوں نے کاغذات نامزدگی میں ان مقدمات کا ذکر نہیں کیا تھا۔تاہم ڈاکٹر فاروق ستار کے این اے 247 سے کاغذاتِ نامزدگی منظور کر لیے گئے ہیں۔ یہ حلقہ کراچی کے پوش علاقوں ڈیفنس اور کلفٹن پر مشتمل ہے۔

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 1 چترال سے سابق صدر پرویز مشرف کے جمع کرائے گئے کاغذاتِ نامزدگی ریٹرننگ افسر محمد خان نے مسترد کردیے ہیں۔ ان کے وکیل نے کراچی کے حلقہ این اے 247 کے ریٹرننگ افسر کو جمع کرائے گئے کاغذات نامزدگی واپس لینے کے لیے اپیل دائر کردی ہے۔

جمعیت علماء اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کے این اے 38 ڈیرہ اسماعیل خان اور عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کے قومی اسمبلی کے دو حلقوں این اے 60 اور این اے 62 سے جمع کرائے گئے کاغذات نامزدگی متعلقہ ریٹرننگ افسروں نے منظور کر لیے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں