ایون فیلڈ ریفرنس کیس میں نواز شریف کو 10 اور مریم نواز کو سات سال سزا

مریم نواز اور ان کے شوہر 10 سال انتخاب لڑنے کے لئے نااہل قرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سناتے ہوئے سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ نواز کے سابق صدر محمد نواز شریف کو دس قید بامشقت اور ان کی بیٹی مریم نواز کو سات سال قید سنائی ہے۔ اس قید میں نامزد ملزم اور نواز شریف کے داماد کیپٹن [ر] صفدر کو ایک سال قید بامشقت کی سزا بھی سنا دی۔

اس موقع پر سزا میں نواز شریف کو 80 لاکھ پائونڈ جبکہ مریم نواز کو 20 لاکھ پائونڈ جرمانہ کیا گیا ہے۔ سزا میں ایون فیلڈز اپارٹمنٹ بلڈنگ کو بحق سرکار ضبط کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ حکم کے مطابق مریم نواز اور ان کے شوہر 10 سال کے لئے الیکشن لڑنے سے نااہل ہوگئے ہیں۔

عدالت نے تین جولائی کو محفوظ کیا گیا فیصلہ اس سے پہلے 12:30 بجے، 2:30 بجے اور 3:30 بجے فیصلہ سنانے کا اعلان کیا تھا۔ اس موقع پر سابق وزیر اعظم نواز شریف کی جانب سے فیصلے کو ایک ہفتے تک موخر کرنے کی درخواست مسترد کردی گئی تھی۔ مقامی میڈیا کے مطابق احتساب عدالت میں صحافیوں کو داخلے کی اجازت نہیں ملی۔

اس موقع پر احتساب عدالت کے باہر رینجرز اور سیکیورٹی اہلکاروں کی بڑی تعداد تعینات رکھی گئی ہے اور سیکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کئے گئے ہیں۔

اسلام آباد انتظامیہ نے سیکیورٹی کی صورتحال کو قابو کرنے کے لئے شہر بھر میں دفعہ 144 نافذ کر رکھی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں