عمران خان کا قصر السلامہ پہنچنے پر شاندار خیر مقدم ، خادم الحرمین الشریفین سے ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

وزیراعظم عمران خان نے جدہ میں بدھ کے روز سعودی فرماں روا شاہ سلمان عبدالعزیز سے ملاقات کی ہے اور ان سے دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تعلقات کے فروغ اور باہمی دلچسپی کے علاقائی اور عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

اس سے پہلے عمران خان کا جدہ میں ’ قصر السلامہ ‘ ( شاہی محل) میں پہنچنے پر شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے بہ نفس نفیس خیر مقدم کیا۔اس موقع پر سعودی مسلح افواج کے ایک چاق چوبند دستے نے پاکستانی وزیراعظم کو گارڈ آف آنر پیش کیا۔

شاہ سلمان نے عمران خان اور ان کے وفد کے ارکان کے اعزاز میں شاہی دیوان میں ضیافت کا بھی اہتمام کیا ۔ پاکستانی وزیراعظم نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے بھی دونوں ممالک کے درمیان تاریخی اور برادرانہ تعلقات پر بات چیت کی ہے۔

انھوں نے جدہ میں اسلامی تعاون تنظیم ( او آئی سی ) کے سیکریٹری جنرل یوسف بن احمد العیثمین سے بھی ملاقات کی ہے اور ان سے مسلم امہ کو درپیش مسائل کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا ہے۔اس ملاقات میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ اور سعودی عرب میں متعیّن پاکستانی سفیر خان ہشام بن صدیق بھی موجود تھے۔

عمران خان نے وزیراعظم کی حیثیت سے سب سے پہلے سعودی عرب کا سرکاری دورہ کیاہے ۔انھوں نے اس موقع پر العربیہ نیوز چینل کے جنرل مینجر ترکی الدخیل سےخصوصی گفتگو کرتے ہوئے پاکستان کی جانب سے الریاض کی مکمل حمایت کا اعادہ کیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ ’’ پاکستان میں جو کوئی بھی برسراقتدار آتا ہے، وہ سب سے پہلے سعودی عرب ہی کا دورہ کرتا ہے۔سعودی عرب نے ماضی میں ہمیشہ وقتِ ضرورت پاکستان کی مدد کی ہے‘‘۔ان کا کہنا تھا کہ ’’ سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان عوام کی سطح پر مضبوط تعلقات استوار ہیں‘‘۔

وزیراعظم اور ان کا وفد سعودی عرب میں قیام کے بعد متحدہ عرب امارات کے مختصر دورے پر ابو ظبی جارہے ہیں جہاں وہ ابو ظبی کے ولی عہد شہزادہ محمد بن زاید آل نہیان سے باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کریں گے۔انھیں شہزادہ محمد بن زاید ہی نے اس دورے کی دعوت دی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں