پاکستان کے ساتھ سرحد پر مسلح افراد کے ہاتھوں 14 ایرانی عسکری اہل کار اغوا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایرانی میڈیا کے مطابق ایران کی مشرقی سرحد کے نزدیک مسلح افراد نے 14 عسکری اہل کاروں کو اغوا کر لیا ہے۔

ایرانی میڈیا نے مذکورہ مسلح افراد کو "دہشت گرد" قرار دیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق مسلح افراد نے منگل کی صبح سویرے سرحدی علاقے کے گاؤں لولکدان میں ایرانی فورسز کے اہل کاروں پر حملہ کر دیا اور ان میں اسے 14 کو اغوا کر لیا۔

اغوا ہونے والوں میں 7 کا تعلق باسیج فورس سے، 5 کا سرحدی محافظین کی فورس سے اور 2 کا پاسداران انقلاب کی انٹیلی جنس سے ہے۔

ابھی تک کسی فریق نے کارروائی کی ذمّے داری قبول نہیں کی ہے۔

ماضی میں پاکستان کے ساتھ سرحد پر واقع اس علاقے میں ایرانی فورسز اور مسلح بلوچ گروپوں کے درمیان معرکہ آرائی دیکھی جاتی رہی ہے۔ ان گروپوں میں "جیش العدل" نامی تنظیم بھی شامل ہے۔ مذکورہ لڑائیوں میں فریقین کے درجنوں افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

یہ پہلا واقعہ نہیں ہے جب مسلح افراد نے ایران کی شرقی سرحد سے ایرانی عسکری اہل کاروں کو اغوا کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں