.

زینب قتل کیس کے مجرم عمران کو پھانسی دے دی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے شہر قصور میں جنسی تشدد کا نشانہ بننے کے بعد قتل کی جانے والی آٹھ سالہ زینب کے مقدمے کے مجرم عمران علی کو لاہور کی کوٹ لکھپت جیل میں پھانسی دے دی گئی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ مجرم عمران علی کو بدھ کی صبح ساڑھے پانچ بجے تختہ دار پر لٹکایا گیا اور پھانسی دیے جانے کے وقت زینب کے والد امین انصاری بھی موجود تھے۔

مجرم عمران علی کو مختصر عدالتی کارروائی کے بعد چار بار سزائے موت، ایک بار عمر قید اور سات برس قید کی سزا سنائی گئی تھی۔
پاکستان میں زینب سے جنسی زیادتی کے واقعے نے سماج کو جھنجھوڑ کر رکھا دیا تھا جس کی وجہ سے مجرم عمران علی کی پھانسی میں عوام کی بڑی دلچسپیت تھی اور سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر ٹاپ ٹرینڈز میں شامل ہے۔

#ZainabMurderCase اور "Imran Ali کے نام سے ٹرینڈ کر رہا ہے جس پر زینب کی تصاویر کے ساتھ عمران علی کی پھانسی کی پوسٹ شیئر کی جا رہی ہیں وہیں پاکستان میں انصاف کے نظام پر بھی بحث ہو رہی ہے تو یہ سوالات بھی اٹھائے جا رہے ہیں کہ عمران جیسے کئی کردار اب بھی ہمارے معاشرے میں کھلے عام گھوم رہے ہیں۔