.

پاکستان اور یو اے ای کا اسٹرٹیجک معاشی رابطے مضبوط کرنے پر اتفاق

وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے ایک روزہ دورہ یو اے ای کا اعلامیہ جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

وزیراعظم پاکستان عمران خان کے ایک روزہ دورہ متحدہ عرب امارات کا سرکاری اعلامیہ جاری کر دیا گیا۔ اعلامیے کے مطابق دونوں ممالک کی قیادت نے دفاعی اور سیکیورٹی شعبوں میں تعاون پر اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

بعد ازاں وزیراعظم عمران خان نے ولی عہد شیخ محمد بن زاید النہیان سے ملاقات کی۔ ملاقات میں پاک ـ یو اے ای تعلقات کو طویل المدتی معاشی واسٹریٹجک تعاون میں تبدیل کرنے پر اتفاق کیا گیا۔

وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے متحدہ عرب امارات کے صدارتی محل پہنچنے پر ولی عہد اور فوج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید بن سلطان النیہیان نے استقبال کیا۔ صدارتی محل میں ان کا شاندار استقبال کیا گیا۔ وزیر اعظم پاکستان کو صدارتی محل میں گارڈ آف آنر پیش کیا گیا۔

اگلے مرحلے میں متحدہ عرب امارات کے ولی عہد وفد کے ہمراہ پاکستان آئیں گے۔ تفصیلات کے مطابق اتوار کو وزیر اعظم عمران خان نے یو اے ای کا دورہ کیا۔ ولی عہد اور وزیر اعظم پاکستان کے درمیان ملاقات میں دوطرفہ تعلقات ،علاقائی اور بین الاقوامی معاملات اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیر اعظم ایک روزہ سرکاری دورے پر متحدہ عرب امارات پہنچے۔ وزیر اعظم عمران خان ولی عہد ابوظہبی شیخ محمد بن زید بن سلطان النیہیان کی دعوت پر متحدہ عرب امارات کا دورہ کیا۔ وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ اعلیٰ سطح کا وفد بھی یو اے ای گیا، جس میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر خزانہ اسد عمر، وزیر پٹرولیم غلام سرور خان، وزیر توانائی عمر ایوب، مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ شامل تھے۔ ولی عہد شیخ محمد بن زید سے ملاقات کے دوران دوطرفہ تعلقات، علاقائی اور عالمی امور پر بات چیت کی گئی۔

سرکاری بیان کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کا دورہ پاکستان- متحدہ عرب امارات کے تعلقات کو مزید مستحکم کرنے اور دوطرفہ تعاون کے فروغ میں اہم سنگ میل ثابت ہو گا۔ شیخ محمد بن زید بن سلطان النہیان سے صدارتی محل میں ہونے والی ملاقات کے دوران دونوں رہنماں میں باہمی دلچسپی کے امور، دوطرفہ تعلقات، علاقائی اور بین الاقوامی معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ولی عہد نے وزیراعظم عمران خان کے اعزاز میں ظہرانہ دیا۔ بعد ازاں وزیر اعظم عمران خان نے ابو ظہبی میں شیخ زید عظیم جامع مسجد کا دورہ کیا۔ جامع مسجد کے منتظم اعلیٰ یوسف العبید نے وزیر اعظم پاکستان کا والہانہ خیرمقدم کیا۔ عمران خان نے مسجد میں نماز ادا کی۔عالم اسلام اور پاکستان کی ترقی وخوشحالی امہ کی سلامتی اور مسلم ملکوں کے استحکام کی دعا کی۔

وزیر اعظم عمران خان نے منتظم اعلی سے بات چیت کرتے ہوئے ابوظہبی کی عظیم جامع مسجد کی عظمت کی تعریف کی ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے ابو اظہبی میں شہداء سکوائر کا دورہ کیا۔ وزیر اعظم پاکستان نے ابو ظہبی کے شہداء سکوائر پر پھولوں کی چادر چرھائی۔ وزیر اعظم عمران خان نے دورے کے دوران متحدہ عرب امارات کے وزیر اعظم اور نائب صدر محمد بن راشد المکتوم سے دبئی میں ان کے محل میں ملاقات کی۔ محل پہنچے پر میں وزیراعظم یو اے ای نے وزیراعظم پاکستان کا والہانہ خیر مقدم کیا۔ ملاقات میں دہشت گردی اور انتہاء پسندی سے نمٹنے کے عزم کا اظہار کیا گیا۔ چیف آف آرمی سٹاف بھی وزیر اعظم پاکستان کے ہمراہ تھے۔

یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے پاکستان کو معاشی بدحالی سے نکالنے کے لیے دوست ممالک کے دوروں کی شروعات کی ہے۔ معاشی مشکلات سے دوست ممالک کو آگاہ کیا جا رہا ہے۔ سعودی عرب اور چین ماضی میں بھی پاکستانی معیشت کو سہارا دے چکے ہیں۔ حال ہی میں سعودی عرب نے مشکل وقت میں پاکستان کو تین ارب ڈالر نقد رقم اور ادھار تیل دینے کا وعدہ کیا ہے جس کی پہلی قسط آئندہ چند روز میں ملنے کا امکان ہے۔ جب کہ چین نے بھی تعاون کے حوالے مثبت جذبات کا اظہار کیا ہے اور دو طرفہ تعاون کے 15 معاہدوں اور مفاہمتی یاد داشتوں پر دستخط کیے گئے تھے، جس سے سی پیک سمیت کئی ایک اہم منصوبوں بشمول سماجی ترقی کے منصوبوں کو مکمل کرنے میں مدد حاصل ملے گی۔

عمران خان نے اپنے اور وفد کے گرم جوش استقبال مہمان نوازی کی پر خلوص تعریف کی ہے، انہوں نے ہم آہنگی اور باہمی تعلقات، مشترکہ تاریخ کی بنیادپر شیخ محمد بن زید الہانان کو پاکستان کے دورہ کی دعوت دی ہے۔ خوشی سے یہ دعوت نامہ قبول کر لیا گیا ہے ولی عہد کے دورہ پاکستان کی تاریخ باہمی مشاورت سے طے کی جائے گی۔