.

برٹش ائیرویز کا آیندہ سال جون سے پاکستان سے دوبارہ پروازیں شروع کرنے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ کی فضائی کمپنی برٹش ائیر ویز ( بی اے) نے ایک عشرے سے زیادہ وقفے کے بعد جون 2019ء سے پاکستان سے اپنی پروازیں بحال کرنے کا اعلان کیا ہے۔

برٹش ائیر ویز کے ایشیا بحرالکاہل اور مشرقِ اوسط کے لیے سیلز کے سربراہ رابرٹ ولیمز نے منگل کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’اسلام آباد اور ہیتھرو (لندن) کے درمیان 2 جون سے ایک مرتبہ پروازیں شروع کی جارہی ہیں۔ان کے درمیان ہفتے میں تین پروازیں چلیں گی اور ان کے ٹکٹ آج سے فروخت کیے جارہے ہیں‘‘۔

اسلام آباد میں متعیّن برطانوی سفیر تھامس ڈریو نے دونوں ملکوں کے درمیان برٹش ائیرویز کی پروازوں کی بحالی کو ایک اچھی خبر قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ اس سے ہمارے تجارتی اور سرمایہ کاری روابط کو فروغ ملے گا۔

پاکستان کی حکومت اور فوج نے بھی اس اعلان کا خیر مقدم کیا ہے۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے سربراہ میجر جنرل آصف غفور نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ پیش رفت پاکستانی قوم اور سکیورٹی فورسز کی ملک میں امن واستحکام کے لیے ایک عشرے کی جدوجہد کا ثمر ہے۔

یادرہے کہ برٹش ائیر ویز نے 20 ستمبر 2008ء کو اسلام آباد کے میریٹ ہوٹل پر تباہ کن خودکش ٹرک بم حملے کے فوری بعد پاکستان کے لیے اپنی پروازیں معطل کردی تھیں۔اس بم دھماکے میں 54 افراد ہلاک اور 270 زخمی ہوگئے تھے۔

فدائینِ اسلام نامی ایک غیر معروف گروپ نے اس ٹرک بم حملے کی ذمے داری قبول کرنے کا دعویٰ کیا تھا لیکن حکام نے القاعدہ سے وابستہ جنگجوؤں پر اس بم دھماکے کا الزام عاید کیا تھا۔

اس حملے کے بعد پاکستان کی سکیورٹی فورسز نے طالبان جنگجوؤں ، القاعدہ اور دوسرے انتہا پسند گروپوں کے خلاف وفاق کے زیر انتظا م سابق قبائلی علاقوں ، بندوبستی شہروں اور علاقوں میں متعدد جنگی کارروائیاں کی ہیں اور ان کی کمر توڑ دی ہے۔تاہم بچے کھچے دہشت گرد گاہے ماہے اب بھی سکیورٹی فورسز اور عام شہروں پر حملے کرتے رہتے ہیں۔