.

سعودی عرب گوادر میں 10ارب ڈالر سرمایہ کاری کرے گا: وزیر پیٹرولیم

وزیر اعظم کے دورہ قطر کے دوران ایل این جی کی قیمت پر نظرثانی کی بات کا امکان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے وفاقی وزیر پیٹرولیم غلام سرور خان نے کہا ہے کہ سعودی عرب گوادر میں آئل ریفائنری اور پیٹرو کیمیکل کمپلیکس میں 10 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گا۔

وزیر پیٹرولیم نے گوادر سے واپسی پر اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب 2 سے 3 لاکھ ٹن یومیہ تیل صاف کرنے کی ریفائنری لگا سکتا ہے۔ امید ہے گوادر ریفائنری کی تعمیر اسی سال شروع ہو گی اور موجودہ دور حکومت میں ہی مکمل ہو گی۔

انھوں نے بتایا کہ سعودی عرب نے فاسفیٹ کھاد بنانے اور متبادل توانائی کے بجلی منصوبے لگانے میں بھی دلچسپی ظاہر کی جبکہ سعودی وزیر توانائی خالد الفالح نے پاکستان کو ایل این جی برآمد کرنے میں بھی دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔

غلام سرور خان نے کہا کہ وزیراعظم کے دورہ قطرکے دوران ایل این جی کی قیمت پر نظرثانی کی بات ہوسکتی ہے۔

وزیر پٹرولیم نے مزید کہا کہ ہمیں صوبوں کے حقوق تسلیم کرنا ہوں گے۔ سندھ، بلوچستان اور کے پی گیس پیداوار میں سرپلس ہیں۔ پنجاب میں گیس پیداوار سب سے کم اور کھپت زیادہ ہے۔ نئی پیٹرولیم پالیسی کی تیاری کے لئے صوبوں سے مشاورت کر رہے ہیں۔ نئی پالیسی میں مقامی گیس پیداوار بڑھانا ترجیح ہوگی۔

غلام سرور خان نے کہا کہ جو ملک گیس پیدا کرتے ہیں وہ سسٹم گیس کو گھریلو سیکٹر کے لئے استعمال نہیں کرتے۔ بھارت، ایران، سعودی عرب سسٹم گیس گھروں میں استعمال نہیں کرتے۔ دنیا میں گھروں کے لئے سسٹم گیس کی بجائے ایل پی جی استعمال ہوتی ہے۔ ہمیں عیاشیاں ختم کرنا ہوں گی۔

وزیر پٹرولیم کا کہنا تھا کہ وزراء کالونی میں میرے گھر کا گیس بل 69 ہزار روپے آیا۔ میں تو اتنا بل برداشت نہیں کرسکتا لہٰذا میں نے 2 گیزر اور 2 گیس ہیٹرز میں سے ایک، ایک منقطع کردیا۔