.

گوگل سمیت سرچ انجنوں نے راتوں رات پاکستانی روپے کی قدر بڑھا دی

ڈالر کی قدر 76 روپے 25، کرنسی کنورٹر پر امارتی درہم 20 روپے 76 پیسے رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عالمی شہرت یافتہ گوگل ودیگر سرچ انجنوں نے راتوں رات پاکستانی کرنسی کی قدر بڑھا دی۔ ڈالر اور یورو سمیت غیر ملکی کرنسی کے غلط ریٹس دکھائے جانے لگے۔ خبریں نشر ہونے پر غلطی درست کرلی گئی۔

مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت بھلے 139 روپے ہی کیوں نہ ہو، مگر سرچ انجنز میں ایک امریکی ڈالر کی قدر 76 روپے 25 پیسے دکھائی گئی۔گوگل کرنسی کنورٹر پر امارتی درہم 20 روپے 76 پیسے نظر آیا جبکہ گوگل کے مطابق ایک یورو 87 روپے 3 پیسے کا خریدا جا سکتا تھا۔ گوگل نے اسی طرح ہر کرنسی کے مقابلے میں پاکستانی کرنسی کی شرح بڑھا دی۔

نومبر میں ایک ہی دن میں ڈالر کی قدر میں ریکارڈ اضافہ ہوا تھا۔ مگر گوگل نے ڈالر کی قدر میں کمی کے سب ریکارڈ توڑ ڈالے۔ ایسا صرف اور صرف مارننگ سٹار کے سرورز میں آنے والی غلطی کی وجہ سے ہوا ہے جو ایک معاشی اعدد وشمار اور ایکسچینج ریٹ فراہم کرنے والی سروس ہے اور دنیا کے تمام بڑے سرچ انجنز کرنسی ایکسچینج ریٹ فراہم کرنے کیلئے اس سروس سے ہی معلومات حاصل کرتے ہیں۔

بلومبرگ اور ایکس ای جیسی ایکسچینج ریٹس فراہم کرنے والی سروسز نے بھی اس خرابی کی تصدیق کی اور بتایا کہ ڈالر کی اصل قیمت 88۔139 روپے ہے۔