گوادرمیں دنیا کی سب سے بڑی 'آئل ریفائنری' میں سعودی برتھ مختص

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے تاریخی دورہ پاکستان کے موقع پر گوادر بندرگاہ میں سعودی عرب کے لیے خصوصی برتھ قائم کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ تزویراتی اعتبار سے گوادر بندرگاہ انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔ پاکستان کے جنوب مغرب میں بحر عرب کے کنارے واقع گوادر بندرگاہ ایران کی آبنائے ہرمز سے کچھ ہی فاصلے پر واقع ہے۔ آبنائے ہرمز سے دُنیا بھر کی ایک چوتھائی تیل بردار آبی ٹریفک گذرتی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق گوادر بندرگاہ میں 'سعودی برتھ' کو بندرگاہ میں روڈ اینڈ بیلٹ کے عظیم الشان چینی منصوبے کے مرکزی مقام پر قائم کیا گیا ہے۔ روڈ اینڈ بیلٹ گوادر کو چین کے سنکیانگ شہر سے ملاتی ہے۔

سعودی عرب گودر بندرگاہ کے بنیادی ڈھانچے کی تعمیر میں سرمایہ کاری کرنے اور 10 ارب ڈالر مالیت سے دنیا کا تیل صاف کرنے کا سب سے بڑا کارخانہ لگانے کے منصوبے پر کام کررہا ہے۔ اس منصوبے سے سعودی عرب خطے میں اپنے تزویراتی مقاصد کے گہرائی تک جانے کی صلاحیت حاصل کرسکے گا۔

پاکستان کے وفاقی وزیر برائے پٹرولیم غلام سرور کان نے"ٹویٹر" پر پوسٹ ایک بیان میں کہا ہے کہ گوادر میں غیر ملکی سرمایہ کاری مستقبل قریب معاشی ترقی کا اہم سنگ میل ثابت ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں