.

بھارت کو جواب دینے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں تھا: میجر جنرل آصف غفور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے پاکستانی حدود میں دراندازی کی کوشش کے بعد پاکستان کے پاس جواب دینے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں تھا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈی جی میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ آج صبح پاک فضائیہ نے اپنی حدود میں رہنے ہوئے لائن آف کنٹرول کے پار مقبوضہ کشمیر میں 6 اہداف کا انتخاب کیا کیونکہ بھارت نے ہم پر جارحیت کی اور ایل او سی کی خلاف ورزی کی اور دعویٰ کیا کہ مبینہ دہشت گردوں کا ٹھکانہ تباہ کیا اور 350 دہشت گردوں کو مارا۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی دراندازی کی کوشش کے بعد جواب دینے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں تھا لیکن جواب کیسے دیا جاتا، کیا اسی طریقے سے جس طرح بھارت نے دیا یا پھر ایسے جیسے ایک ذمہ دار ملک دیتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے عسکری ٹارگٹ کو نشانہ نہ بنانے کا ہدف کیا تھا جبکہ انسانی جانوں کے ضیاع سے بھی گریز کرنا تھا اور اس لیے ہم نے 6 ہدف کو نشانہ بنانے کا منصوبہ کیا۔

ترجمان پاک فوج نے کہا کہ پاکستان کی جانب سے بھارت کے 2 طیارے گرائے جانے کے علاوہ ایک اور بھارتی طیارہ گرنے کی اطلاعات بھی ہیں۔

میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ بھارتی میڈیا کی جانب سے دعویٰ کیا گیا کہ انہوں نے پاکستان کا ایک ایف 16 طیارہ گرایا ہے لیکن میں واضح کردوں کہ اس میں ایف 16 استعمال ہی نہیں ہوا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے آج کی کارروائی اپنے دفاع کے لیے کی، جنگ میں کسی قسم کی جیت نہیں ہوتی، میڈیا سے گزارش ہے کہ وہ امن کی صحافت کرے، اگر ہم پر جنگ مسلط کی گئی تو اس کی رپورٹنگ الگ ہو گی۔

ایک سوال کے جواب میں میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ پاکستان نے جو جواب دیا ہے وہ جواب نہیں بلکہ اپنے دفاع کی صلاحیت ہے، اب یہ بھارت پر ہے کہ وہ کس راستے کو اختیار کرتا ہے لیکن اگر ہم پر جارحیت کی جاتی ہے تو ہم جواب تو دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان جنگ کے حالات کی طرف نہیں بڑھنا چاہتا لیکن اگر ایسا ہوتا ہے تو ہم اپنی حدود سے ایسے ہدف کو نشانہ بناتے ہیں، جس سے بھارت کو نقصان ہو۔

بھارتی پائلٹس گرفتار

میجر جنرل آصف غفور نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے دو بھارتی پائلٹس کو بھی حراست میں لیا ہے جن سے ان کے بقول مہذب قوم کی طرح سلوک کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ ایک بھارتی پائلٹ زخمی ہے جسے فوجی اسپتال میں طبی امداد دی جا رہی ہے۔ ترجمان نے وضاحت کی ہے کہ دونوں بھارتی طیارے لائن آف کنٹرول پار کرکے پاکستان کی فضائی حدود میں آئے تھے۔

فوجی ترجمان نے بتایا کہ طیارے گرانے سے قبل پاکستانی طیاروں نے لائن آف کنٹرول پر بھارت کے چھ اہداف کو نشانہ بنایا تھا جس کی ویڈیو ان کے بقول میڈیا کو جاری کردی جائے گی۔

پاکستانی ٹی وی چینلز نے گرفتار ہونے والے مبینہ بھارتی پائلٹ کی ایک ویڈیو بھی نشر کی ہے جس میں انہیں اپنا نام ونگ کمانڈر ابھے نندن اور سروس نمبر 27981 بتاتے ہوئے سنا جا سکتا ہے۔

بھارتی حملہ

خیال رہے کہ 26 فروری کو بھارت کی جانب سے آزاد کشمیر کے علاقے میں دراندازی کی کوشش کی گئی تھی جس پر پاک فضائیہ نے بروقت ردعمل دیتےہوئے دشمن کے طیاروں کو بھاگنے پر مجبور کردیا تھا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے بتایا تھا کہ آزاد کشمیر کے علاقے مظفرآباد میں داخل ہونے کی کوشش کر کے بھارتی فضائیہ کے طیاروں نے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کی خلاف ورزی کی۔