.

سعودی شہر ابھا پر حوثی ڈرون طیارے کا حملہ قابل مذمت اقدام ہے: پاکستان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان نے یمن کی آئینی حکومت کے خلاف برسرپیکار حوثی باغیوں کی جانب سے سعودی عرب کے شہر ابھا پر بغیر پائلٹ طیارے سے کئے گئے حملے کی مذمت کی ہے۔

ایک بیان میں حکومت پاکستان نے شاہی دفاعی افواج کی جانب سے حوثی ڈرون طیارے کو کسی مذموم کارروائی سے پہلے بروقت نشانہ بنانے پر شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا ہے۔ بیان میں ڈرون طیارے کے ملبے کی زد میں آ کر زخمی ہونے والے تارکین وطن اور مقامی شہریوں سے اظہار یکجہتی اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی گئی ہے۔

’’حکومت پاکستان سعودی عرب کی قیادت اور عوام کے ساتھ اپنی مکمل حمایت اور یکجہتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس امر کا اعادہ کرتی ہے کہ مملکت کے استحکام اور الحرمین الشریفین کی سلامتی کو کسی بھی خطرے کی صورت میں پاکستان کبھی ریاض کو اکیلا نہیں چھوڑے گا۔‘‘

بیان میں کہا گیا ہے کہ عام شہری آبادی کو نشانہ بنانے والے یمنی باغیوں کے حملے بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی ہیں۔ ایسی کارروائیاں علاقائی امن اور سلامتی کے لئے کھلا چیلنج ہیں۔ ایسے حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اعلان کرتے ہیں کہ ہم سعودی عرب کی دہشت گردی کے خلاف جنگ کی تمام کوششوں میں مملکت کے ساتھ کھڑے ہیں۔

یاد رہے کہ حوثی باغیوں کا ابھا پر یہ پہلا حملہ نہیں، ماضی میں بھی سرکش گروہ نہتے شہریوں کو نشانہ بنانے کی بزدلانہ کوششیں کر چکا ہے، جسے شاہی فوج نے ہمیشہ ناکام بنا کر شہر کو بڑی تباہی سے بچایا ہے۔