سرکاری سکیم کے تحت1 لاکھ 7 ہزار سے زائد عازمین حج کی قرعہ اندازی

پاکستانی حجاج کرام کی ایمیگریشن پاکستان کے ایئر پورٹس پر ہو سکے گی: وزیر مذہبی امور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
5 منٹس read

پاکستان سے سرکاری سکیم کے تحت 1 لاکھ 7ہزار سے زائد عازمین حج کی قرعہ اندازی مکمل ہو گئی۔ پاکستانی ہوائی اڈوں پر امیگریشن ہو سکے گی۔ وفاقی وزیر مذہبی امور وبین الامذاہب ہم آہنگی پیر نور الحق قادری نے بتایا ہے کہ سعودی عرب نے 16 ہزار کے اضافی کوٹے کا نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا جس کی وجہ سے یہ کوٹہ قرعہ اندازی میں شامل نہیں کیا گیا۔ جب باقاعدہ اور تحریری طورپر آگاہ کر دیا جائے گا اس کی بھی قرعہ اندازی کرلی جائے گی۔

منگل کو وزارت مذہبی امور کے کمیٹی روم میں وزیر مذہبی امور نے قرعہ اندازی کی۔ پہلا نام کراچی، دوسرا پشاور، تیسرا اسلام آباد سے خوش نصیبوں کا نکلا۔ حج اسکیم کے بارے میں بیان پڑتے ہوئے پیرنور الحق قادری نے کہا کہ ایک لاکھ 7 ہزار سے زائد خوش نصیبوں کے ناموں کا اعلان کیا گیا ہے۔ قرعہ اندازی مکمل طور پر کمپیوٹرائزڈ کی گئی خوش نصیبوں کو بذریعہ ایس ایم ایس آگاہ کرنے کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔ مسلسل تین سال سے ناکام 12 ہزار عازمین بغیر قرعہ اندازی کامیاب قرار پائے۔ 80 سے 90 سال عمر کے 2 ہزار عازمین کی درخواستیں موصول ہوئیں۔ بزرگ خاتون عازمین کے ساتھ 2 معاونین بھجوائے جائیں گے۔

وزارت مذہبی امور کے مطابق سرکاری حج اسکیم کے تحت سب سے زیادہ پنجاب سے سب سے زیادہ ایک لاکھ 8 ہزار 6 درخواستیں آئیں جبکہ سندھ سے 49 ہزار 343، خیبرپختونخوا سے 40 ہزار 752 اور بلوچستان سے 10 ہزار 258 درخواستیں موصول ہوئیں۔ کشمیر سے 2 ہزار 316، فاٹا سے 4 ہزار 314 اور گلگت بلتستان سے 2 ہزار 422 درخواستیں آئیں۔ وزارت مذہبی امور کے مطابق مجموعی طور پر 2 لاکھ 16 ہزار 623 درخواستیں موصول ہوئیں جن میں سے مرد عازمین کی ایک لاکھ 23 ہزار700 اور خواتین کی 92 ہزار923 درخواستیں ملیں۔ اب تک کے سعودی کوٹے کے مطابق ایک لاکھ 84 ہزار 210 پاکستانی فریضہ حج ادا کریں گے جس میں سرکاری اسکیم کے تحت ایک لاکھ 7 ہزار 526 اور نجی اسکیم کے ذریعے 71 ہزار 684 عازمین حجاز مقدس جائیں گے۔

وزارت مذہبی امور کی جانب سے حج اخراجات 4 لاکھ 36 ہزار975 روپے مقرر کیے گئے ہیں اور حاجیوں کو قربانی کے لیے 19 ہزار 451 روپے الگ سے ادا کرنا ہوں گے۔ انہوں نے بتایا پاکستانی حجاج کرام کی ایمیگریشن پاکستان کے ایئرپورٹس پر ہوسکے گی۔ وہ درخواست قبول ہو گئی ہے اور اس سلسلے میں سعودی عرب کا ایک اعلیٰ اختیاراتی وفد اس مہینے کے آخر میں پاکستان آ رہا ہے جوکہ اسلام آباد ایئرپورٹ کا جائزہ لے گا اس طرح نہ صرف اسلام آباد بلکہ کراچی، لاہور، پشاور اور کوئٹہ سے بھی سعودی عرب جانے والے حجاج بھی اس پروجیکٹ کی سہولیات کا فائدہ اٹھا سکیں گے۔ اسی طرح سعودی حکومت نے پاکستان کا حج کوٹہ 2 لاکھ تک بڑھا دیا ہے اور امید کی جاتی ہے کہ جلد ہی تحریری صورت میں سعودی حکومت پاکستانی حکومت کو آگاہ کرے گی۔

وفاقی وزیر کے مطابق حج 2019ء کیلئے پاکستان کا کوٹہ1 لاکھ 84 ہزار 210 ہے سعودی عرب میں 16 ہزار کے اضافے کا اعلان کرتے ہوئے 2 لاکھ کرنے کے بارے میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو آگاہ کیا تھا مگر سعودی عرب نے تاحال اس بارے میں کوئی سرکاری نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا ہے جس کی وجہ سے یہ اضافی کوٹہ قرعہ اندازی میں شامل نہیں ہے۔

اس کے علاوہ قرعہ اندازی اور اس حوالے سے مزید معلومات کیلئے وزارت کی ویب سائٹس (www.mora.gov.pk) یا (www.hajjinfo.org) حج انکوائری نمبر 9216980-82 051-9205696 پربھی رابطہ کیا جا سکتا ہے۔ قرعہ اندازی میں کامیاب ہونے والے درخواست گزاروں کو اپنے پاسپورٹ متعلقہ بینک / برانچ میں جمع کروانا لازمی ہوں گے جس کیلئے وزارت جلد ہی اطلاع دے گی۔ قرعہ اندازی میں ناکام ہونے والے درخواست گزار اپنی بینک / برانچ سے اپنی جمع کردہ رقم دفتری اوقات میں بینک سے واپس لے سکتے ہیں اس کیلئے وزارت کی الگ سے منظوری کی کوئی ضرورت نہیں۔ اگر کوئی بینک پیسے واپس کرنے میں پس وپیش سے کام لے تو درخواست گزار وزارت کے اکائونٹ آفیسر سے 051-9208465 پر رابطہ کرکے اس بینک / برانچ کی شکایت کرسکتا ہے۔

قرعہ اندازی کے موقع پر پریس کانفرنس میں وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے بیان پڑھا، مہنگے ترین حج سے متعلق میڈیا کے تیز وتند سوالات کے پیش نظر وزیر مذہبی امور نے پریس کانفرنس ادھوری چھوڑ دی، سوالات مرحلہ آیا تو اٹھ کر چلے گئے اور سوالات نہیں لئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں