.

ڈاکٹرمہاتیرمحمد کا پاکستان کے جے ایف 17 تھنڈر میں اظہارِ دلچسپی،دورے کے بعد وطن روانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ملائشیا کے وزیراعظم ڈاکٹر مہاتیر محمد نے پاکستان کے چین کے اشتراک سے تیار کردہ لڑاکا طیارے جے ایف 17 تھنڈر میں خصوصی دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔

وہ پاکستان کے تین روزہ سرکاری کے بعد آج ہفتے کے روز واپس چلے گئے ہیں ۔ انھیں نورخان ایئربیس پر وزیراعظم عمران خان نے الوداع کیا ۔روانگی سے قبل آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور پاک فضائیہ کے سربراہ مجاہد انور خان نے ڈاکٹر مہاتیر محمد کو لڑاکا طیارے جے ایف 17 تھنڈر کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔

ڈاکٹر مہاتیر محمد نے جے ایف 17 تھنڈر طیارے کا معائنہ کرتے ہوئے کہا کہ ملائشیا لڑاکا جیٹ کو خرید کرنے میں خصوصی دلچسپی رکھتا ہے ۔انھوں نے طیارے کے کاک پٹ اور اندرونی حصے کو بہ غور ملاحظہ کیا۔ انھیں اس موقع پر پاک فضائیہ کی جیکٹ تحفے میں دی گئی۔ وزیر خزانہ اسد عمر نے صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو میں بتایا ہے کہ ملائشیا نے پاکستان سے جے ایف 17 تھنڈر فائٹر لڑاکا طیاروں ، حلال گوشت اور چاول کی خریداری میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔

وزیراعظم ڈاکٹر مہاتیر نے آج اسلام آباد میں یوم پاکستان پریڈ کی تقریب میں مہمان ِ اعزازی شرکت کی ۔انھیں پریڈ گراؤنڈ پہنچنے پر مسلح افواج کے چاق چوبند دستے نے سلامی دی۔ انھوں نے پاکستان کی تینوں مسلح افواج اور خصوصی فورسز کی پریڈ کا معائنہ کیا اور پاک فضائیہ کے لڑاکا طیاروں کے فضائی کرتب بھی ملاحظہ کیے۔ ڈاکٹر مہاتیر محمد کو ایوانِ صدر میں منعقدہ ایک خصوصی تقریب میں صدر عارف علوی نے ملک کے اعلیٰ ترین سول اعزاز نشانِ پاکستان سے نوازا ہے۔

ان کی وطن واپسی سے قبل ملائشیا کی جانب سے پاکستان کو دفاعی نمائش میں شرکت کی دعوت دی گئی ہے۔ان کے اس دورے کے موقع پر پاکستان اور ملائشیا نے جمعہ کو پانچ بڑے منصوبوں میں دوطرفہ تعاون اور سرمایہ کاری کے فروغ کے لیے مفاہمت کی یادداشتوں پر دست خط کیے تھے۔