دفتر خارجہ کی طرابلس میں مقیم پاکستانیوں کو محفوظ مقامات پر منتقل ہونے کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کے دفترِخارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے لیبیا کے دارالحکومت طرابلس میں مقیم پاکستانی شہریوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ محفوظ مقامات کی جانب منتقل ہوجائیں۔

دفتر خارجہ نے طرابلس میں متحارب جنگجو گروپوں کے درمیان جاری لڑائی کے بعد سکیورٹی کی کشیدہ صورت حال کے پیش نظر پاکستانی شہریوں کے لیے نیا ہدایت نامہ جاری کیا ہے ۔اس میں انھیں خبردار کیا گیا ہے کہ وہ اپنے تحفظ کے پیش نظر طرابلس سے محفوظ مقامات کی جانب چلےجائیں۔

ڈاکٹرمحمد فیصل نے ٹویٹر پر ایک بیان میں کہا ہے کہ پاکستانی شہری لڑائی والے علاقوں میں جانے سے گریز کریں اور بیرون ممالک میں مقیم مگر لیبیا جانے کے خواہاں پاکستانی اپنا پروگرام فی الحال ملتوی کردیں۔ انھوں نے بتایا ہے کہ لیبیا میں مقیم پاکستانی شہریوں کی مدد کے لیے وزارتِ خارجہ میں کرائسیس مینجمنٹ سیل کام کر رہا ہے اور طرابلس میں پاکستانی سفارت خانہ بھی اپنے شہریوں کی معاونت کے لیے کام کر رہا ہے۔

دفتر خارجہ کے اس بیان سے چندے قبل ہی بین الاقوامی ریڈکراس کمیٹی نے کہا ہے کہ لیبیا کے دارالحکومت طرابلس کے اقامتی علاقے بھی اب میدانِ جنگ میں تبدیل ہو گئے ہیں اور وہاں متحارب فورسز کے درمیان شہر پر کنٹرول کے لیے شدید لڑائی ہو رہی ہے۔

ریڈ کراس کمیٹی نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا کہ مشرقی لیبیا سے تعلق رکھنے والے کمانڈر خلیفہ حفتر کے زیر کمان فوج کی 4 اپریل کو چڑھائی کے بعد ’’ گذشتہ تین ہفتے کے دوران میں طرابلس شہر اور اس کے نواحی علاقوں میں انسانی صورت حال بڑی تیزی سے خراب ہوئی ہے‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں